شواہد مہنگے پڑگئے،وزیراعظم کی پی ٹی آئی کیخلاف نئی درخواست

collage_647_042516090026

اسلام آباد: وزیراعظم نوازشریف نے پاناما لیکس سے متعلق کیس میں پاکستان تحریک انصاف کے دستاویزی شواہد کو جھوٹاقراردے دیا۔ وزیراعظم نے سپریم کورٹ میں نئی درخواست دائرکردی۔ وزیراعظم نواز شریف نے پاناما کیس میں پی ٹی آئی کی جانب سے سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے 686 صفحات پر مشتمل دستاویزی شواہد کو ناقابل قبول اور جھوٹا قرار دے دیا۔ اس حوالے سے وزیراعظم کی جانب سے سپریم کورٹ میں نئی درخواست دائر کر دی گئی ہے۔

درخواست میں موقف اپنایا گیا ہے کہ  پاکستان تحریک انصاف کی دستاویزات ناقابل قبول ہیں۔ عمران خان نے الزامات ثابت کرنے کےلیے ٹھوس شواہد فراہم نہیں کیے۔

وزیراعظم نے درخواست میں مزید کہا ہے کہ درخواست گزارکسی دستاویزکی نشاندہی کریں۔ عمران خان نے عمومی الزمات عائد کیے ہیں۔ ہم جواب اور اعتراض کا حق رکھتے ہیں۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے سات نومبر کو ہونے والی سماعت میں فریقین سے حتمی شواہس طلب کیے تھے جس پرپی ٹی آئی نے 15 نومبر کی سماعت سے ایک روز قبل شریف خاندان کے خلاف 686 صفحات پر مشتمل دستاویزی شواہد عدالت میں جمع کرائے تھے۔

دو روز قبل ہونے والی سماعت میں سپریم کورٹ کے لارجر بینچ نے پی ٹی آئی کے شواہد پر اعتراضات اٹھاتے ہوئے ریمارکس دیے تھے کہ پی ٹی آئی کے وکیل نے ہزاروں کاغذات جمع کرادیے، اخباری تراشے ثبوت نہیں ہوتا، اخبار ایک دن خبر ہوتا ہےجبکہ اگلے دن پکوڑے بک رہے ہوتے ہیں۔ الف لیلیٰ کی کہانیوں میں عدالت کا وقت کیوں ضائع کیا گیاکسی اخبار کی خبر پر کیا کسی کو پھانسی ہوسکتی ہے؟معاملہ پھیلا کر 1982تک پہنچادیاگیا،اسےسمیٹےگاکون؟

سپریم کورٹ میں پاناما کیس کی سماعت آج پھرہو رہی ہے۔ سماء

IMRAN KHAN

panama case

pm nzwaz sharif

new petition in panama case

Tabool ads will show in this div