سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا کراچی آپریشن جاری رکھنے کا حکم

ویب ایڈیٹر:


اسلام آباد :  سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے کہا ہے کہ کراچی میں جرائم کے مکمل خاتمے تک آپریشن جاری رکھا جائے، آپریشن کو بلا تفریق رنگ و نسل اور صوبہ جاری رکھا جائے، کسی سیاسی جماعت کا کارکن گرفتار ہو تومتعلقہ جماعت کو نام فراہم کیا جائے، جب کہ دوسری جانب سندھ رینجرز کے  کرنل طاہر کا کہنا تھا کہ کراچی آپریشنز میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی کمر توڑ دی گئی ہے، کالعدم طالبان کا نیٹ ورک تباہ ہوگیا اب وہ کسی تنظیم نو کے قابل نہیں رہے ہیں۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس اسلام آباد میں ہوا، کراچی میں ہونے والے آپریشنز سے متعلق رینجرز کے کرنل طاہر کا کہنا تھا کہ آپریشن ضرب عضب کے بعد شہر کراچی میں 3,696 کے قریب آپریشنز کیے گئے، جس میں پانچ ہزار سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا، گرفتار افراد میں کالعدم تنظیموں اور سیاسی جماعتوں کے لوگ اور کارندے شامل ہیں۔ رینجرز حکام نےکراچی میں ایم کیو ایم کے دفتر پر چھاپے کے بارے میں سینیٹ کمیٹی کو بریفنگ بھی دی۔ اجلاس کی صدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی داخلہ کے سربراہ سینیٹر طلحہ محمود  نے کی۔

 

کراچی میں ایم کیو ایم کے دفتر پر چھاپے سے متعلق رینجرز سندھ کے حکام کرنل طاہر محمود نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ رینجرز گلشن معمار میں معمول کے گشت پر تھی کہ قریبی عمارت سے فائرنگ ہوئی، یہ عمارت بھی غیر قانونی ہے، فائرنگ کے بعد عمارت کا سرچ آپریشن کیا گیا جس سے 23 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا، 12 افراد کو ڈاکٹر صغیر اور فیصل سبزواری کے حوالے کر دیا گیا، تین ٹارگٹ کلر اور منشیات کے کاروبار میں ملوث ملزمان تھے جنہیں جیل بھجوا دیا، 8 ملزمان اشتہاری تھے انہیں پولیس کے حوالے کر دیا ۔کرنل طاہر محمود کا کہنا ہے کہ کراچی آپریشن کے بعد بھتہ خوری میں 55 فیصد کمی ہوئی اور آپریشن کےبعد کراچی میں دہشت گردی کی کوئی بڑی کارروائی نہیں ہوئی،

 

کمیٹٰی کو بریفنگ دیتے ہوئے کرنل طاہر کا کہنا تھا کہ کراچی آپریشن میں ایم کیو ایم کے 560افراد کو حراست میں لیا، کالعدم امن کمیٹی کے539،جب کہ اے این پی کے 40کارکن حراست میں لیے، کرنل طاہر کے مطابق آپریشنز کے دوران کالعدم تحریک طالبان کے 60،جب کہ دیگر کالعدم تنظیموں کے352افراد زیر حراست لیے۔

بریفنگ میں ترجمان کا کہنا تھا کہ آپریشن ضرب عضب کے بعد سے شروع ہونے والی ٹارگٹڈ کارروائیوں اور آپریشنز میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی کمر توڑ دی گئی ہے، کالعدم طالبان کا نیٹ ورک تباہ ہوگیا اب وہ کسی تنظیم نو کے قابل نہیں رہے ہیں۔ سماء

میں

کی

burger

جاری

bail

دی

mirza

Tabool ads will show in this div