خیبرپختونخوا نے طرز حکمرانی میں پنجاب کو پیچھے چھوڑ دیا

Oct 26, 2016

PILDAT-report

اسلام آباد: پلڈاٹ نے سالانہ سروے کے دوسرے حصے کے نتائج جاری کردیئے ہیں۔ خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت نے طرز حکمرانی کے 28 میں سے 18 اشاریوں میں مثبت درجہ بندی حاصل کرتے ہوئے مقبول حمایت میں دیگر صوبوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔

یہ عوامی آراء عام انتخابات 2013 کے نتیجے میں منتخب ہونے والی وفاقی اور صوبائی حکومتوں کا دوسرا سال مکمل ہونے کے موقع پر پلڈاٹ کے پاکستان میں معیار طرز حکمرانی پر ملک گیر عوامی سروے کا حصہ ہیں۔ یہ نتائج پلڈاٹ کے معیار جمہوریت اور معیار طرز حکمرانی پر دو حصوں پر مشتمل عوامی سروے کا دوسرا حصہ ہے۔

خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت طرز حکمرانی کے 28 میں سے 18 اشاریوں میں مثبت درجہ بندی کے ساتھ واضح طور پر سرفہرست رہی ہے، پنجاب حکومت 28 میں سے 8 مثبت اشاریوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی ہے۔ اسی طرح سندھ اور بلوچستان کی دونوں حکومتیں 28 میں سے فقط دو مثبت اشاریوں پر ریٹنگ حاصل کرنے میں کامیاب رہی ہے۔

دوسری جانب صوبائی حکومتوں کی مجموعی مقبولیت سے متعلق ملک گیر عوامی سروے کے مطابق پنجاب کی صوبائی حکومت 76 فیصد پر اوول ریٹنگ کے ساتھ سرفہرست رہی ہے، خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت 38 فیصد کے ساتھ دوسرے، سندھ حکومت 30 فیصد کے ساتھ تیسرے اور بلوچستان 28 فیصد کے ساتھ چوتھے نمبر پر رہی ہے۔

طرز حکمرانی کے صوبائی اسکورز کی تفصیلات جدول اول میں ملاحظہ کئے جاسکتے ہیں۔ سماء

tab1

KP GOVERNMENT

Punjab govt

Quality of Governance

Tabool ads will show in this div