ایرانی فورسز کی پاکستانی حدود میں بلا اشتعال فائرنگ،اہل کار شہید

ویب ایڈیٹر:

 

کوئٹہ  :   ضلع کچ کی تحصیل مند میں ایرانی جنونی فوجیوں کی بلا اشتعال فائرنگ سے فرینٹئیر کو ر  کا صوبیدار شہید، جب کہ تین اہل کار زخمی ہوگئے۔

 

ایف سی ذرائع کے مطابق بلوچستان کت ضلع کیچ کی تحصیل مند میں ایرانی جنونی فوجیوں کی جانب سے پاکستان حدود کے اندر بلا اشتعال شدید فائرنگ کی گئی، ایرانی فورسز کی فائرنگ سے سرحد پر ڈیوٹی دیتا ایف سی کا صوبیدار شہید، جب کہ دیگر تین فوجی شدید زخمی ہوگئے۔ ایرانی فورسز کی جانب سے فائرنگ کے بعد پاکستانی علاقوں پر شدید گولہ باری بھی کی گئی، جس سے ایف سی کی ایک ڈبل کیبن گاڑی تباہ ہوگئی۔

 

ایف سی ترجمان کا  کہنا ہے کہ فائرنگ کا واقعہ گزشتہ روزسرحدی علاقے چوکاب میں پیش آیا، ایرانی فورسز کی جانب سے بلا اشتعال  مسلسل چھ 6گھنٹے تک پاکستانی حدود میں گولے برسائے گئے۔

 

واضح رہے اس سے قبل ایرانی فوجی کمانڈر  نے  پاکستان پر الزام عائد کرتے ہوئے  ایرانی فوج کے ڈپٹی جنرل کمانڈنگ بریگیڈئر حسین سلامی نے  پاکستان کو دھمکی دی اور کہا کہ  اگر پاکستان  نے دہشت گردوں کے خلاف کارروائی اور اپنی سرحد کو محفوظ نہ بنایا تو پاکستانی علاقوں میں دہشت گردوں کے خلاف خود کارروائی کریں گے۔

 

 یہاں یہ بات بھی غور طلب ہے کہ  اس سے قبل بھی ایرانی بارڈر سیکیورٹی گارڈز کے اغوا کے بعد ایران پاکستانی حدود میں کارروائی کی دھمکی دے چکا ہے اور ایرانی وزیر داخلہ عبدالرضا رحمان کا کہنا تھا اگر پاکستان نے ایرانی سیکیورٹی محافظین کو رہا کرانے کے لیے کچھ نہ کیا تو ہم پاکستان میں اپنے فوجی بھیج کر ان کو رہا کرانے کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔

 

دوسری جانب آج ہونے والی دفتر خارجہ کی ہفتہ وار پریس بریفنگ میں ایران کی جانب سے دی گئی دھمکی اور الزامات کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ہے، ترجمان کا کہنا تھا کہ ایران ثبوت فراہم کرے۔ سماء

میں

کی

شہید

war

pipeline

kuwait

gulf

Tabool ads will show in this div