بادشاہ کو قانون کے نیچے لانے کیلئے پہلا قدم اٹھ گیا

Oct 20, 2016

Imran Khan Sc Talk New Isb 20-10

اسلام آباد:چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا ہے کہ بادشاہ کو قانون کے نیچے لانے کیلئے آج پہلا قدم ہے۔ پارلیمنٹ نے اپنا کردارادا نہیں کیا مگرخوشی ہے کہ سپریم کورٹ اپنا کردارادا کررہی ہے۔ یہ بھی واضح کیا کہ وزیراعظم کے خلاف کیس شروع ہونے سے احتجاج ختم نہیں ہوگا۔ وزیراعظم کے خلاف نا اہلی کی درخواستوں کی سماعت کے موقع پر سپریم کورٹ کے باہر میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے عمران خان نے سپریم کورٹ میں وزیراعظم کیخلاف درخواستوں کی سماعت کو  جمہوریت کے لیے خوش آئند قرارد یتے ہوئے کہا کہ مغرب میں جمہوریت کی تعریف میگنا کارٹا سے شروع ہوئی تھی جس کے تحت چیف ایگزیکٹو بادشاہ نہیں ہوتا بلکہ قانون کا پابند ہوتا ہے۔

آج بادشاہ کو قانون کے نیچے لانے کیلئے ہمارا پہلا قدم ہے آج پہلا قدم ہے جو جمہوریت اور ہمارے مستقبل کیلئے بھی خوش آئند ہے۔کیس شروع ہو گا تو وہ چیزیں بھی سامنے آئیں گی جو اب تک چھپائی جا رہی تھیں۔

عمران خان نے کہا کہ وزیراعظم کو خود کو پارلیمنٹ میں احتساب کیلئے پیش کرنا چاہیئے تھا مگر انہوں نے نہیں کیا۔ ایک سینیئر حکومتی وزیر نے کہا کہ نوازشریف آپ فکر نہ کریں، کچھ دن تلک لوگ سب بھول جائیں گے۔ خوشی ہے کہ پارلیمنٹ نے نہیں تو سپریم کورٹ نے اپنا کردار ادا کیا۔

میڈیا سے گفتگو میں کپتان نے یہ بھی واضح کر دیا کہ سپریم کورٹ میں وزیراعظم کیخلاف کیس شروع ہونے کے باوجود اسلام آباد بند کرنے کا پروگرام ختم نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعت کو انصاف نہ ملے تو پرامن احتجاج کرنا آئینی حق ہے۔ کیس شروع ہونے سے احتجاج ختم نہیں ہو گا۔ ہمارا احتجاج تمام اداروں کیخلاف اورجمہوری عمل کا حصہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ دھاندلی اورکرپشن ایک دوسرے کے ساتھ نتھی ہیں۔  دھاندلی وہی کرتا ہے جو پیسہ بنانے آتا ہے، ملک کی خدمت کرنے کیلئے آنے والا دھاندلی نہیں کرے گا۔  ایف بی آر سمیت دیگرادارے ہمارے ٹیکس پر چلتے ہیں، یہ نواز شریف کو جوابدہ نہیں۔ ادارے کمزور ہوں تو کرپشن زیادہ ہوتی ہے، کرپشن وہ کینسر ہے جو ملک کو تباہ کررہی ہے۔

عمران خان نے مزید کہا کہ سوا تین سال کا عرصہ گزرگیا مگر دھاندلی کے خلاف چارمیں سے دو مقدمات ابھی بھی التوا کا شکارہیں،  سپریم کورٹ سے درخواست کریں گے کہ انہیں فورا سنا جائے۔ سماء

IMRAN KHAN

SUPREME COURT OF PAKISTAN

Panama leaks

house-detention

Tabool ads will show in this div