حساس علاقوں میں دہشتگردی کاخطرہ،فوج رینجرزنےپوزیشنزسنبھال لیں

اسٹاف رپورٹ


لاہور / کراچی/ اسلام آباد  :   نویں اور دسویں محرم پر حساس شہروں ميں دو دن کے لئے موبائل فون سروس بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، چون اضلاع میں فوجی اور نیم فوجی دستے طلب کرلئے گئے، اسلام آباد میں تین دن کے لیے موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر بھی پابندی لگادی گئی۔

ممکنہ دہشت گردی کے خدشات ! کے تناظر میں نو اور دس محرم کو موبائل فون سروس معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، 54 اضلاع میں فوجی اور نیم فوجی دستے تعینات ہونگے۔

وزارت داخلہ نے سابق وزیر داخلہ رحمان ملک کی یاد تازہ کرتے ہوئے صوبائی حکومتوں کی سفارشات پر نویں اور دس محرم کو عزاداری جلوسوں کے دوران موبائل فون سروس بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ 54 اضلاع میں 32 ہزار 6 سو 95 آرمی'رینجرز اور فرنٹئیرکور اور فرنٹئیرکانسٹبلری اہلکار تعینات ہونگے۔

ذرائع کیمطابق کچھ حساس شہروں میں دہشت گردی کا خطرہ ہے جن میں راول پنڈی' لاہور ' جھنگ' ملتان ' کراچی ' کوئٹہ ' پشاور' ہنگو ، میانوالی ' بھکر ' ڈی آئی خان ' ڈی جی خان اور دیگر شہر شامل ہیں۔

وزارت داخلہ نے سکیورٹی انتظامات کے تحت 12 ہیلی کاپٹرز حاصل کر لئے ہیں جبکہ وزارت داخلہ میں خصوصی کنٹرول روم بھی قائم کر دیا گیا ہے۔ سماء

میں

علاقوں

spy

Tabool ads will show in this div