بھارت نے اڑی حملے میں ملوث ہونے کے شواہد پاکستان کو دیدیئے

Sep 27, 2016
336246-abdul-basit-gen نئی دہلی : بھارتی وزارت خارجہ میں ہائی کمشنر عبد الباسط کو طلب کرکے اڑی حملے میں ملوث ہونے کے ثبوت دے دیئے، جسے پاکستان نے مسترد کردیا۔ بھارتی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ بھارتی وزارت خارجہ نے عبدالباسط کو طلب کرکے اڑی حملے میں پاکستان کے ملوث ہونے کے شواہد پیش کردیئے ہیں۔ پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط نے بھارتی الزامات مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان ذمہ دار ملک ہے، اڑی حملے سے ہمارا کوئی تعلق نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارت ٹھوس ثبوت کے بغیر پاکستان کے خلاف الزام تراشی سے پرہیز کرے۔ دوسری جانب بھارتی میڈیا کے مطابق اڑی حملے کے دو سہولت کاروں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ سماء سے خصوصی گفت گو میں بھارت میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط کا کہنا تھا کہ بھارتی دفتر خارجہ میں مجھے بحیثیت پاکستانی ہائی کمشنر طلب کیا گیا، جہاں بقول بھارت کے اڑی حملے کے شواہد پیش کیے گئے،جسے مسترد کرتے ہیں، بغیر ثبوت کون سے سہولت کار گرفتار کیے پاکستان کو بتایا جائے۔ عبدالباسط نے بھارت کو دو ٹوک جواب دیتے ہوئے کہا کہ پہلے ثبوت دیں پھر بات کریں، پاکستان کیخلاف الزام تراشی کو بند کیا جائے، حملے میں پاکستان کا کوئی ہاتھ نہیں ہے، بھارتی بارڈر پر سیکیورٹی انتہائی سخت ہے، اڑی حملہ کرنے والے پاکستان سے کیسے آئے؟۔ عبدالباسط کا مزید کہنا تھا کہ بھارتی بارڈر پر کوئی چڑیا بھی پر نہیں مار سکتی، پاکستان ایک ذمہ دار ملک ہے، پاکستان کسی دہشت گردی میں ملوث نہیں۔ سماء

abdul basit

Uri Attack

Pakistani High Commissioner

Tabool ads will show in this div