مہمندایجنسی خودکش حملہ،شہید نمازیوں کی تعداد28ہوگئی

Sep 16, 2016
bomb-2 لنڈی کوتل : مہمند ایجنسی کے علاقے میں مسجد میں نماز جمعہ کے دوران خود کش حملے میں شہید ہونے والوں کی تعداد اٹھائیس تک جا پہنچی ہے، جب کہ دھماکے میں تیس سے زائد افراد زخمی ہوئے۔ حکام کی جانب سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔ پولیٹیکل انتظامیہ کے مطابق مہمند ایجنسی کے گاؤں پائے خان میں قائم مسجد میں نماز جمعہ کا اہتمام جاری تھا کہ اسی دوران خود کش حملہ آور نے اپنے آپ کو دھماکے سے اڑا لیا، حملے میں شہید نمازیوں کی تعداد اٹھائیس تک جا پہنچی ہے، جب کہ حملے میں تیس سے زائد نمازی افراد زخمی بھی ہوئے۔ شہید ہونے والوں میں پانچ بچے بھی شامل ہیں، جو نماز کی ادائیگی کے کیلئے اگلی صفوں میں موجود تھے۔

ویڈیو دیکھیں: مہمندایجنسی،نمازکےدوران خودکش حملہ،25نمازی شہید

مقامی انتظامیہ کے مطابق خود کش دھماکے کے دوران مسجد نمازیوں سے بھری ہوئی تھی، حملہ آور مسجد میں داخل ہوا اور بلند آواز میں  نعرہ لگا کر خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ پولیٹیکل انتظامیہ کا کہنا ہے کہ تیس سے زائد زخمی باجوڑ ايجنسی اسپتال، جب کہ سات زخمی سی ايم ايچ پشاور منتقل کیے گئے ہیں۔ MOHMAND AGENCY BLAST MAP  16-09 ڈپٹی ایڈمنسٹریٹر مہنمد ایجنسی کے مطابق لاشوں اور کچھ زخمیوں کو ڈی ایچ کیو اسپتال بھی منتقل کیا گیا ہے، شدید زخمیوں کو آرمی کے ہیلی کاپٹر کے ذریعے سی ایم ایچ پشاور اور لیڈ ریڈنگ منتقل کیا گیا۔ حکام کی جانب سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔ سیکیورٹی ذرائع کے مطابق پاک افواج کی ميڈيکل ٹيم زخمیوں کے علاج ميں مصروف ہے۔ Mohmand-Agency-Map-640x384 واضح رہے کہ متاثرہ مہمند ایجنسی کا علاقہ پاک افغان سرحد کے قریب واقع ہے، جہاں پہلے بھی دہشت گردی کے واقعات رونما ہوچکے ہیں۔ سماء

TALIBAN

SUICIDE ATTACK

MASJID

MOSQUE

death toll

Mohmand agency

JUMMA PRAYERS

Tabool ads will show in this div