ریاست کے اندر ریاست قبول نہیں: وزیراعظم گیلانی

اسٹاف رپورٹ


اسلام آباد : وزیراعظم گیلانی نے کہا ہے کہ تمام ادارے پارلیمنٹ کو جوابدہ ہیں ۔ مشکل وقت میں فوج کا ساتھ دیا لیکن ریاست کے اندر ریاست قبول نہیں ، اگر کوئی انفرادی طور پر یہ تصور کرے کہ وہ حکومت کے ماتحت نہیں تو یہ غلط ہے ۔۔۔ عوام کے ٹیکس سے جس جس کو تنخواہ دی جارہی ہے وہ پارلیمنٹ کے ماتحت ہے


حکومت پر استعفے کیلئے نون لیگ کا دباو جیسے جیسے بڑھ رہا ہے، وزیراعظم کا لہجہ بھی سخت ہوتا جارہا ہے، تمام ادارے پارلے منٹ کو جواب دہ ہیں یہ وہ بات ہے جس میں کئی باتیں پوشیدہ ہیں، قومی اسمبلی سے خطاب کے دوران وزیراعظم نے ایبٹ آباد آپریشن کا ذکر کیا اورویزوں کےاجرا سے متعلق سوالات پر سوال اٹھایا ،انھوں نے بتایا کہ کمیشن اسامہ کی پاکستان میں چھ سال تک موجودگی کا پتہ لگانے کیلئے بنایا گیا تھا لیکن اب بات کا رخ موڑا جارہا ہے


یہی نہیں فوج کا احترام کرنےوالے وزیراعظم گیلانی نے راست میں ریاست بھی ناقابل قبول قرار دی ہے


 اس سے پہلے اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتےہوئے بھی وزیراعظم نے فوج کو منظم ادارہ قرار دیا لیکن یہ بھی کہہ دیا کہ اگر کوئی انفرادی طور پر یہ تصور کرےکہ وہ حکومت کے ماتحت نہیں تو یہ بات غلط ہے


حکومت سے استعفے کا تو مطالبہ کیا ہی جارہا ہے لیکن وزیراعظم کو اب سازشوں کا بھی یقین ہوچلا ہے


نون لیگ اور تحریک انصاف اپوزیشن کی دو اہم جماعتیں ہیں اور دونوں حکومت پر کرپشن کے الزامات لگاتی ہیں،لیکن وزیراعظم کہتے ہیں ملک بنانے والوں پر بھی کرپشن کے الزامات لگائےگئے تھے اور اب عوام کو جمہوریت یا آمریت میں سے کسی ایک کا فیصلہ کرنا ہوگا۔ سماء

کے

eid

law

qualifier

tigers

Tabool ads will show in this div