الیکشن کمیشن پاکستان کا 93 لاکھ اضافی بیلٹ پیپرز چھاپنے کا اعتراف

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد : الیکشن کمیشن کا بیلٹ پیپرز کی چھپائی سے متعلق ایک اور یو ٹرن، بیلٹ پیپرز کی چھپائی سے متعلق نئے اعداد و شمار سامنے آگئے، اب الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ 2013ء کے عام انتخابات کیلئے 93 لاکھ اضافی بیلٹ پیپرز چھاپے گئے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفت گو کرتے ہوئے ڈی جی الیکشن کمیشن مسعود ملک نے میڈیا کو بتایا کہ انتخابات میں قومی اور صوبائی اسمبلی کے 17 کروڑ 24 لاکھ ووٹرز کیلئے 18 کروڑ 17 لاکھ بیلٹ پیپرز چھاپے گئے، جن میں اضافی بیلٹ پیپرز کی تعداد 93 لاکھ تھی۔

الیکشن کمیشن اس سے قبل پارلیمانی کمیٹی کو بریفنگ میں 18 کروڑ بیلٹ پیپرز چھاپنے کا دعویٰ کرچکا ہے، 28 نومبر کو عمران خان نے 55 لاکھ اضافی بیلٹ پیپرز چھاپے جانے کا دعویٰ کیا تو الیکشن کمیشن کا 8 لاکھ اضافی بیلٹ پیپرز چھاپنے کا تردیدی بیان سامنے آیا۔

الیکشن کمیشن کا کہنا ہے اضافی بیلٹ پیپرز چھاپنے کا مقصد دھاندلی نہیں تکنیکی ضرورت ہوتا ہے، انہوں نے گزشتہ انتخابات کے اضافی بیلیٹ پیپرز کا حوالہ بھی دیا کہ 1997ء کے عام انتخابات میں 83 لاکھ اضافی بیلٹ پیپرز چھاپے گئے، 2002ء کےعام انتخابات میں 94 لاکھ اور 2008ء کے عام انتخابات میں 90 لاکھ اضافی بیلٹ پیپرز چھاپے گئے تھے۔

اسلام آباد میں 30 نومبر جلسہ کی تقریر میں عمران خان نے 70 لاکھ اضافی بیلٹ پیپرز چھاپنے کا انکشاف کیا تو ڈی جی الیکشن کمیشن مسعود ملک نے نیا یوٹرن لیتے ہوئے 93 لاکھ اضافی بیلٹ پیپرز چھاپنے کا اعتراف کرلیا۔ سماء

paper

crowned

Tabool ads will show in this div