انگلینڈ کیخلاف پاکستان کی جیت لازمی

Aug 30, 2016

CRICKET-IRL-PAK-ODI

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ٹیسٹ سیریز دو دو سے برابر ہونے کے بعد ون ڈے سیریز کا آغاز بھی ہوچکا ہے اور سیریز کے پہلے دو میچز میں قومی ٹیم کو انگلش ٹیم کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے، جبکہ سیریز میں واپس آنے کےلئے تیسرا میچ جیتنا لازمی ہوگیا ہے۔ انگلینڈ نے سیریز کے پہلے ون ڈے میں پاکستان کو 44 رنز سے شکست دی، میچ کا فیصلہ ڈک ورتھ لوئس میتھڈ کے تحت کیا گیا۔ سیریز کے دوسرے میچ میں انگلش ٹیم نے چار وکٹوں سے کامیابی سمیٹی۔ پاکستان نے ابھی تین میچز مزید کھیلنے ہیں اور تینوں میچز میں فتح حاصل کرکے سیریز جیتنا لازمی ہوگئی ہے۔ اگر قومی ٹیم انگلینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز جیتنے میں کامیاب نہ ہوئی تو اسکے نتائج شاہینوں کو 2019 کے ورلڈ کپ میں بھگتنا ہونگے۔ انگلینڈ کیخلاف ون ڈے سیریز میں ناکامی کی صورت میں پاکستان کو 2019 کے ورلڈ کپ کےلئے کوالیفائنگ راونڈ کھیلنا ہوگا۔ پاکستان اس وقت آئی سی سی ون ڈے رینکنگ میں نویں نمبر پر ہے اور ورلڈ کپ 2019 میں جانے کےلئے قومی ٹیم کو اگلے سال ستمبر تک آٹھویں پوزیشن درکار ہے جوکہ کسی  پہاڑ سے کم نہیں۔

Ireland's Niall O'Brien (R) is out stumped for 10 by Pakistan's Sarfraz Ahmed (L) during the first one day international (ODI) cricket match between Ireland and Pakistan at the Malahide stadium in Dublin on August 18, 2016.  / AFP PHOTO / PAUL FAITH

پاکستان کی ون ڈے میں کارکردگی دیکھی جائے تو وہ قابل تحسین نظر نہیں آتی۔ پاکستان ٹیم نے اظہر علی کی کپتانی میں اب تک تین ون ڈے سیریز بنگلہ دیش، زمبابوے اور سری لنکا کے خلاف کھیلی جس میں سے قومی ٹیم نے زمبابوے اور سری لنکا کے خلاف تو ون ڈے سیریز جیت لی، لیکن بنگلہ دیش نے پاکستان کو وائٹ واش کیا۔ بنگلہ دیش سے سیریز ہارنے کے بعد پاکستان کی ون ڈے رینکنگ میں پوزیشن غیر مستحکم ہوئی۔ یہی وجہ تھی کہ پاکستان، زمبابوے اور سری لنکا کو سیریز ہرانے کے باوجود بھی ون ڈے رینکنگ میں اپنی پوزیشن بہتر نہ کرسکا۔ ون ڈے کے مقابلے میں ٹیسٹ سیریز میں پاکستان کی کارکردگی قابل رشک ہے۔ قومی ٹیم نے مصباح الحق کی قیادت میں انگلینڈ کے ساتھ حالیہ ٹیسٹ سیریز ڈرا کی اور دنیا کی نمبر ون ٹیسٹ ٹیم بننے کا اعزاز حاصل کیا۔ پاکستان نے پہلی مرتبہ آئی سی سی کی ٹیسٹ رینکنگ میں پہلی پوزیشن حاصل کی ہے۔ بہرحال، قومی ٹیم کو اسوقت ون ڈے سیریز میں اچھی کارکردگی پیش کرکے پاکستان کی عزت رکھنا ہوگی، بصورت دیگر ورلڈ کپ کےلئے کوالیفائنگ راونڈ کھیلنا ہوگا۔

Pakistan Cricket

سیریز کے بقیہ میچز میں پاکستان کو فیلڈنگ اور بیٹنگ کے شعبے میں توجہ دینا ہوگی۔ ابتدائی دو میچز میں قومی ٹیم نے جو غلطیاں کیں ہیں، وہ تیسرے میچ میں ناقابل قبول ہونگی۔ قومی ٹیم نے انگلش بلے بازوں کے میچ میں انتہائی اہم کیچز ڈراپ کیے جس کے نتیجے میں ان کھلاڑیوں نے ٹیم کی فتح میں اہم کردار ادا کیا۔ اسی طرح بیٹنگ کے شعبے کی بات کی جائے تو وہاں بھی صورتحال خراب نظر آتی ہے۔ دونوں میچز کی کارکردگی دیکھی جائے تو صرف سرفراز احمد نے ہی ٹیم کو بچانے کی کوشش کی ہے، لیکن اسکے علاوہ کوئی بھی ٹھیک سے بلے بازی کرنے میں ناکام نظر آرہا ہے۔ اسلئے ٹیم کو بقیہ میچز میں فیلڈنگ، بیٹنگ اور بالنگ تمام شعبوں میں بہتری لانا ہوگی اور سیریز ہر صورت جیتنا ہوگی، ورنہ بدنامی کے بادل پاکستان کے سر پر منڈلا رہے ہیں۔ کہیں ایسا نہ ہو کہ پاکستان کو ورلڈ کپ 2019 کےلئے کوالیفائنگ راونڈ کھیلنا پڑ جائے۔

ENGLAND

one day series

Test Ranking