ایوارڈ تعلیم، امن اور تبدیلی چاہنے والے بچوں کے نام کرتی ہوں، ملالہ

Nov 30, -0001

ویب ایڈیٹر

اوسلو : ملالہ یوسف زئی نے نوبل امن انعام جیتنے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ایوارڈ ان سب بچوں کے نام کرتی ہوں جو تعلیم، امن اور تبدیلی چاہتے ہیں، بچیوں سے تعلیم کا حق چھینا جانے لگا، دنیا کا کوئی بچہ تعلیم سے محروم نہیں رہنا چاہئے، طالبان کی گولی نہیں جیت سکی، میری آواز بڑھتی چلی گئی، تعلیم سے محروم 6 کروڑ 60 لاکھ بچیوں کی نمائندہ ہوں۔ انہوں نے عالمی رہنماؤں سے سوال کیا کہ اسلحہ فراہم کرنا آسان لیکن کتاب دینا مشکل کیوں؟، ٹینک بنانا آسان اور اسکول بنانا مشکل کیوں؟ ایسا کیوں ہے طاقتور ممالک دنیا میں امن لانے کے قابل نہیں، آئیے دنیا کی پہلی اور آخری نسل بنیں جو تعلیم کے فروغ کیلئے کام کرے۔

ملالہ یوسفزئی نوبل انعام حاصل کرنیوالی دنیا کی کم عمر ترین شخصیت بن گئیں، اوسلو میں پروقار ایوارڈ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے گل مکئی کا کہنا تھا کہ آج میرے لئے بہت خوشی کا دن ہے، اپنی والدہ، اساتذہ کی شکر گزار ہوں، میری ماں نے مجھے صبر کرنا سکھایا، ایوارڈ حاصل کرنیوالی پہلی پشتون، پاکستانی ہونے پر فخر ہے، کیلاش ستیارتھی بچوں کے حقوق کے علمبردار ہیں، مجھے اور کیلاش کو ساتھ اعزاز ملنے پر انتہائی خوشی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ ایوارڈ ان سب بچوں کے نام ہے جو تبدیلی، امن چاہتے ہیں، دنیا کا کوئی بچہ تعلیم سے محروم نہیں رہنا چاہئے، میرے پاس دو راستے تھے، خاموش رہ کر قتل ہونے کا انتظار کرتی یا آواز اٹھانے پر مار دی جاتی، میں نے دوسرا راستہ چنا، طالبان کی گولی نہیں جیت سکی، میری آواز بڑھتی چلی گئی، بچیوں سے تعلیم کا حق چھینا جانے لگا، میں تنہا نہیں، تعلیم سے محروم ہر بچی کی آواز ہوں۔

ملالہ نے انعامی رقم ملالہ فنڈ کے نام کرنے اور سوات و شانگلہ میں تعلیم پر خرچ کرنے کا اعلان کیا، وہ کہتی ہیں کہ ان 6 کروڑ 60 لاکھ لڑکیوں کی نمائندہ ہوں جو تعلیم حاصل نہ کرسکیں، شام، عراق اور غزہ میں جنگ تعلیم کی راہ میں حائل ہورہی ہے، تعلیم کے فروغ کیلئے عالمی رہنماء سنجیدگی سے سوچیں، تعلیم کو اولین ترجیح دینے کیلئے متحد ہوجائیں۔

انہوں نے بین الاقوامی قوتوں سے سوال کیا کہ اسلحہ فراہم کرنا تو آسان لیکن کتاب دینا مشکل کیوں؟ ٹینک بنانا آسان اور اسکول بنانا مشکل کیوں؟، ایسا کیوں ہے طاقتور ممالک دنیا میں امن لانے کے قابل نہیں، آئیے دنیا کی پہلی اور آخری نسل بنیں جو تعلیم کے فروغ کیلئے کام کرے۔ سماء

parliament

بچوں

نام

vegetables