دفترخارجہ نےشاہ محمود کےبیانات کوبےبنیاد،گمراہ کن قراردیکرمسترد کردیا

اسٹاف رپورٹ
اسلام آباد : ملکی سرحدوں پر خطرات منڈلا رہے ہیں لیکن بعض سیاستداں صورت حال کی سنگینی کو نظر انداز کرکے بیان بازی میں مصروف ہیں۔ دفترخارجہ نے ایٹمی پروگرام سے متعلق سابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے بیان کو بے بنیاد اور گمراہ کن قرار دے دیا ہے۔

اعتزاز احسن کا کہنا ہے کہ ایٹمی پروگرام کے بارے میں شاہ محمود کے بیان کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔ سابق وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی گھوٹکی کے جلسے میں اتنے جذباتی ہوئے کہ نہ جانے کیا کچھ کہہ گئے لیکن اس پر دفتر خارجہ کو وضاحت کرنا پڑ گئی۔

دفتر خارجہ کے ترجمان نے اپنے بیان میں واضح کیا کہ پاکستان کے ایمٹی پروگرام کو کوئی خطرہ نہیں۔  یہ محفوظ ہاتھوں میں ہے اور اس کے تحفظ پر کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائے گا۔

سابق وزیر خارجہ کا صدر زرداری سے متعلق بیان بے بنیاد اور گمراہ کن ہے۔ 18 ویں ترمیم کے بعد صدر نے تمام اختیارات پارلیمنٹ اور وزیراعظم کو منتقل کر دیئے ہیں۔ ایٹمی پروگرام اب نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول اتھارٹی کے دائرہ اختیار میں ہے۔

اتھارٹی میں وزیر دفاع، وزیر خارجہ اور تینوں سروسز چیفس شامل ہیں۔ سپریم کورٹ بار کے سابق صدر اور پیپلزپارٹی کے رہنما اعتزاز احسن نے بھی شاہ محمود قریشی کے بیان کو غیراہم قرار دیا۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ سیاسی رہنماؤں کو حساس موضوع پر بیان بازی کر کے قوم کو اضطراب میں مبتلا کرنے سے گریز کرنا چاہیے۔ سماء

daughter

opener

radar

Tabool ads will show in this div