کراچی: صنعتوں کی گیس بند، بجلی کی لوڈشیڈنگ جاری

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
کراچی: شہر میں توانائی کا بحران جا ری ہے، بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے لئے سی این جی اسٹیشنوں کی اٹھارہ گھنٹے بندش کے بعد اب اتوار کو صنعتوں کو بھی گیس کی فراہمی بند ہے۔

فیکٹری مالکان تو پریشان ہیں ہی مزدور بھی رو رہے ہیں کیونکہ وہ ایک دن کی دیہاڑی سے محروم ہوگئے ہیں ۔۔ فیکٹریوں کو گیس کی بندش سے محنت کشوں پر کیا گزر رہی ہے جانتے ہیں اس رپورٹ میں ۔۔

 شہریوں کا پیٹ کاٹنے کے باوجود کے ای ایس سی کا پیٹ نہیں بھرا جا سکا۔۔ سی این جی اسٹیشنوں کی ایک دن کی بندش کے بعد اتوارکو صنعتوں کو بھی گیس کی فراہمی بند کی گئی تو مزدوروں کو دال روٹی کے لالے پڑ گئے۔۔

گھروں سے دیہاڑی لگنے کی امید لئے فیکٹریوں میں پہنچنے والوں کو واپسی کی راہ لینا پڑی اور وہ فیکٹریاں جو چوبیس گھنٹے دھواں اگلتی تھیں، اب مزدورں کو منہ چڑا رہی ہیں ۔۔ دیہاڑی پر کام کرنے والے محنت کش کہتے ہیں کہ فیکٹریوں کا پہیہ رکتا ہے تو ان کا چولہا ٹھنڈا پڑ جاتا ہے۔۔

گزشتہ ماہ صنعت کاروں، کے ای ایس سی اور سوئی سدرن کے درمیان مفاہمت کے تحت اتوار کو صنعتیں بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا تھا ۔۔

فیکٹریاں بند رکھ کر اضافی گیس کے ای ایس سی کو فراہم کی جا رہی ہےتاکہ زیادہ بجلی پیدا کی جاسکے اور لوڈشیڈنگ سے جان چھوٹ جائے ۔۔ لوڈشیڈنگ کے عذاب سے تو جان نہیں چھوٹ سکی ،، مزدوروں کا ایک دن کا روزگار بھی جاتا رہا ۔۔ محنت کشوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے مسائل بڑھانے کے باجئے انہیں حل کرنے پر توجہ دی جائے ۔۔ سماء

کی

burger

جاری

Tabool ads will show in this div