عمران خان کی ہمشیرہ نےمریم نواز سے معافی مانگ لی

Jul 03, 2016

Collages

[video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/07/UZMA-CLARIFICATION-LHR-PKG-03-07.mp4"][/video]

لاہور: چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی بہن ڈاکٹرعظمیٰ خان نے وی آئی پروٹوکول پرمامور سیکیورٹی اہلکاروں کی جانب سے ہراساں کیے جانے کا الزام مریم نواز کو دینے پران سے معذرت کر لی ہے۔ ڈاکٹر عظمیٰ خان نے مریم نواز کو خط لکھ کر معذرت کی۔ خط میں اپنا موقف بیان کرتے ہوئے ڈاکٹرعظمی نے لکھا کہ چوہدری عاصم گجر نے اصل مہمان کے بجائے مریم نواز کا نام لیا تھا۔ میں تصور بھی نہیں کرسکتی تھی کہ عاصم گجرمریم نواز سے متعلق جھوٹ بول کر غلط فہمی پیدا کریں گے۔

خط میں مزید لکھا گیا ہے کہ سکیورٹی پروٹوکول نے مجھے اور میرے بچوں کو ہراساں کیا اور غیر اخلاقی زبان استعمال کی تھی، مریم نواز کے پروٹوکول کا نام غلط فہمی کی بنیاد پر لیا۔

CmbFpgGWgAAAshP (2)

واضح رہے کہ جمعہ کے روز عمران خان کی بہن ڈاکٹرعظمیٰ خان اپنے بچوں کے ہمراہ لاہور کے علاقہ گلبرگ سے اپنی گاڑی میں گزر رہی تھیں کہ ج وہاں سے گزرنے والے وی آئی پی پروٹوکول پرمامور سکیورٹی اہلکاروں کی گاڑی  نے ان کی گاڑی کو ٹکرماری اور انہیں ہراساں کیاتھا۔

مزید پڑھیے: وی آئی پی پروٹوکول کی عظمیٰ خان سے بدتمیزی، معاملے میں نیا موڑ

وہاں موجود افراد نے ڈاکٹر عظمیٰ کو بتایا کہ یہ وزیراعظم نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز کا پروٹوکول تھا جس پر ڈاکٹر عظمی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے مریم نواز پر سخت تنقید کی۔ عمران خان نے بھی ن لیگ کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔ بعد میں علم ہوا کہ پروٹوکول مریم نواز کا نہیں بلکہ سابق صدر آصف علی زرداری کی بہن اور پیپلز پارٹی کی مرکزی رہنما فریال تالپورکا تھا جو پی پی رہنماء عاصم گجر کے گھر ان سے اظہار افسوس کرنے کیلئے آئی تھیں۔

مزید پڑھیے:عظمیٰ خان کو عمران خان کی طرح جھوٹ نہیں بولنا چاہیئے

عاصم گجر نے سماء سے گفتگو کرتے ہوئے انکشاف کیا تھا کہ صدر آزاد کشمیر ان سے تعزیت کیلئے آئے تھے، ان کے پروٹوکول میں شامل گارڈزنے ڈاکٹرعظمیٰ کی گاڑی روکی جس پر انہوں نے میرے گھر آکر چیخ پکار کی۔واقعے کے وقت صدر آزاد کشمیر کے ہمراہ سابق صدر مملکت اور پی پی پی کے رہنماء آصف زرداری کی بہن فریال تالپور بھی تھیں۔

مریم نواز کی جانب سے بھی سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹرپر اس بات کی تردید کرتے ہوئے واضح کیا گیاتھا کہ واقعے کے وقت وہ اسلام آباد میں تھیں۔

جس کے بعد آج ڈاکٹر عظمیٰ کی جانب سے خط کے ذریعے مریم نواز سے باضابطہ معافی مانگ لی گئی ہے۔ سماء

IMRAN KHAN

APOLOGY

MARYAM NAWAZ

dr uzma

Tabool ads will show in this div