چترال میں تباہی کی ذمہ داروفاق اورصوبائی حکومت ہے

Maghfirat Shah Pkg 03-07 TABISH

[video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/07/Maghfirat-Shah-Pkg-03-07-TABISH.mp4"][/video]

چترال:ضلع ناظم مغفرت شاہ نے سیلاب سے تباہی کا ذمہ دار وفاق اور صوبائی حکومت کو قرار دے دیا۔کہا کہ چترال ریڈ زون میں ہے اس کے باوجود کوئی حفاظتی اقدامات نہیں کئے گئے، نہ ہی رقم جاری کی گئی۔ سماء سے ٹیلیفونک بات چیت میں ضلع ناظم چترال نے صوبائی اور وفاقی دونوں حکومتوں کو تباہی کا ذمہ دار قرار دینے ہوئے کہا کہ یہ کوئی تماشا ہے؟ نقصانات کا تخمینہ 16 ارب روپے لگایا گیا تھامگرعلاقے کے لیے 50 کروڑ روپے بھی جاری نہیں کیے گئے ۔

مزید پڑھیے: چترال میں سیلاب نے تباہی مچا دی، 31 افراد جاں بحق

انہوں نے کہا کہ چترال انتہائی متاثرہ علاقہ اورریڈزون میں ہےیہاں ضلعی سطح پر ہنگامی امداد کا ادارہ بننا چاہیے تھا جس سے ہنگامی حالات میں فوری اقدامات ہو سکتے تھے۔ پی ڈی ایم اے پشاور جبکہ این ڈی ایم اے اسلام آباد میں ہے لیکن اضلاع میں کوئی سیٹ اپ موجود نہیں۔

مزید پڑھیے: چترال سیلاب،عمران خان کی صوبائی حکومت کو متحرک ہونے کی ہدایت

مغفرت شاہ نے کہا کہ 30 یا 40 سال میں جو بنا تھا وہ گزشتہ سیلاب میں بہہ گیا۔ ابھی تک سیلاب میں تباہ ہونے والا ایک پل نہیں بنا حتیٰ کہ ایک کلومیٹر سڑک نہیں بنی۔ یہاں سخت مایوسی ہے اور لوگوں کا ریاست پر سےاعتماد ختم ہوگیا۔ گزشتہ سال کے سیلاب کے بعد ابھی کوئی تعمیر نہیں ہوئی تھی کہ نئی تباہی آ گئی۔ سماء

PDMA

NDMA

HEAVY RAIN

chitral flood

KPK govt

Tabool ads will show in this div