وی آئی پی پروٹوکول کی عظمیٰ خان سے بدتمیزی، معاملے میں نیا موڑ

Ik Sister Talk Lhr 01-07

لاہور : لاہور میں وی آئی پی پروٹوکول میں شامل اہلکاروں کی جانب سے پی ٹی آئی کپتان عمران خان کی بہن عظمیٰ خان سے بدتمیزی اور ہراساں کرنے کے معاملے میں نیا موڑ آگیا، ذرائع کا کہنا ہے کہ پروٹوکول مریم نواز کا نہیں بلکہ پی پی پی رہنماء فریال تالپور کا تھا جبکہ عاصم گجر کے مطابق صدر آزاد کشمیر ان سے اظہار افسوس کیلئے آئے تھے وی آئی پی پروٹوکول ان کے ساتھ تھا۔

لاہور میں پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی بہن ڈاکٹر عظمیٰ خان اپنے بچوں کے ساتھ گاڑی میں جارہی تھیں کہ انہیں وی آئی پی پروٹوکول کے عملے نے ہراساں کیا، ان پر بندوقیں تانیں اور بدتمیزی کی، جس پر عظمیٰ خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انہیں بتایا گیا ہے کہ پروٹوکول وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کا تھا۔

JULY 01

سماء کی تحقیقات کے دوران معاملے نے نیا موڑ لے لیا، ذرائع کے مطابق عظمیٰ خان سے بدتمیزی کرنے والا پروٹوکول مریم نواز کا نہیں بلکہ سابق صدر آصف زرداری کی بہن فریال تالپور کا تھا، جو پی پی رہنماء عاصم گجر کے گھر ان سے اظہار افسوس کرنے کیلئے آئی تھیں۔

عاصم گجر نے سماء سے گفتگو کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ صدر آزاد کشمیر ان سے تعزیت کیلئے آئے تھے، ان کے پروٹوکول میں شامل گارڈز نے ڈاکٹر عظمیٰ کی گاڑی روکی، جس پر انہوں نے میرے گھر آکر چیخ پکار کی۔

ان کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر عظمیٰ نے کہا کہ گارڈز نے مجھ سے بدتمیزی کی ہے تاہم میرے بیٹے نے عمران خان کی بہن سے واقعے پر معذرت کی تھی۔

واضح رہے کہ واقعے کے وقت صدر آزاد کشمیر کے ہمراہ سابق صدر مملکت اور پی پی پی کے رہنماء آصف زرداری کی بہن فریال تالپور بھی تھیں۔

HDL 2100 new 01-07

اس سے قبل لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کی بہن نے بتایا تھا کہ وہ اپنے بچوں کے ساتھ گاڑی میں جارہی تھیں کہ وی آئی پی پروٹوکول میں شامل اسکواڈ نے انہیں گاڑی سائیڈ میں کرنے کا کہا اس کے بعد سامنے سے آنیوالی گاڑی نے ان کی گاڑی کو ٹکر مار دی، پولیس اہلکاروں نے بندوقیں تان لیں اور ہراساں کیا۔

ان کا کہنا ہے کہ جس گھر میں کوئی وی آئی پی آیا تھا میرے معلوم کرنے پر بتایا کہ مريم نواز ان سے تعزیت کرنے آئی تھیں، وزیراعظم کی بیٹی کے پروٹوکول کے باعث پوليس نے بدتميزی کی۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال بھی میرے بیٹوں کو پولیس نے شدید تشدد کا نشانہ بنایا تھا، مقدمہ درج کرایا تاہم اس کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا، اب کس کیخلاف مقدمہ درج کراؤں۔ سماء

IMRAN KHAN

Uzma Khan

Maryam Nawaz Protocol

Tabool ads will show in this div