وفاق نے میمو کو جھوٹ کا پلندہ قراردیدیا

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹر
اسلام آباد: میمو اسکینڈل کو وفاق نے جھوٹ کا پلندہ قرار دیا ہے۔
سپریم کورٹ میں وفاق نے آرمی چیف، ڈی جی آئی ایس آئی، حسین حقانی اور منصور اعجاز کے بیان حلفی پر جواب جمع کرا دیا ہے۔۔ شاہد اورکزئی کی کیس میں فریق بننے کی درخواست پر سماعت اٹھائیس دسمبر تک ملتوی کر دی گئی ہے۔
اٹارنی جنرل مولوی انوار الحق نے وفاق کی جانب سے اٹھارہ صفحات پر مشتمل جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا ۔۔ جس میں کہا گیا ہے کہ منصور اعجاز نے پاکستانی اداروں کو ایک دوسرے کے خلاف کھڑا کرنے کی کوشش کی ۔۔ صدر اور وزیراعظم سمیت کسی حکومتی شخصیت کا میمو سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔۔ ملکی دفاع کیلئے فوج کی قربانیوں سے کسی کو انکار نہیں ۔۔ عوام نے بھی ملکی سلامتی اور جمہوریت کیلئے قربانیاں دی ہیں ۔۔ جواب میں کہا گیا ہے کہ صدر، وزیراعظم، آرمی چیف اور جنرل پاشا کی ملاقات ہوئی، حسین حقانی سے استعفیٰ نہیں لیا گیا بلکہ وہ خود مستعفی ہوئے ۔۔ اس سے پہلے شاہد اورکزئی کی جانب سے کیس میں فریق بننے کے لئے دائر درخواست کی سماعت اٹھائیس دسمبر تک ملتوی کر دی گئی ، جسٹس شاکر الله جان کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے درخواست کی سماعت کی ۔ بینچ نے دلائل سننے کے بعد ڈپٹی اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کر دیا ہے۔

کا

کو

نے

وفاق

Tabool ads will show in this div