وفاقی حکومت نے گھریلو، تجارتی گیس 13.98فیصد مہنگی کرنے کی منظوری دیدی

اسٹاف رپورٹر


اسلام آباد: وفاقی حکومت نے گھریلواور تجارتی گیس تیرہ اعشاریہ نوآٹھ فیصد مہنگی کرنے کی منظوری دیدی ہے جبکہ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی نے یکم جنوری سے سی این جی چھیالیس فیصد مہنگی کرنے کی سفارش کردی ہے۔


وفاقی حکومت نے گیس 207 فیصد تک مہنگی کرنے کی منظوری دی ہے۔ گھریلووتجارتی صارفین کے لیےگیس 13.98فیصد اورصنعتی صارفین کے لیے گیس16.97فیصد مہنگی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔


اس کے علاوہ فرٹیلائزرسیکٹر کےلیے گیس 207.10 فیصد اورآئی پی پیز کےلیے گیس 34.57فیصد مہنگی کرنے کی منظوری دی گئی ہے۔ دوسری جانب سی این جی صارفین کےلیےگیس38.63فیصد مہنگی کردی گئی ہے ۔ واپڈااور کےای ایس سی کےلیے گیس 13.58فیصد مہنگی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یکم جنوری سے گیس ٹیرف میں اضافے کا حتمی نوٹیفکیشن اوگرا جاری کرے گا۔


گیس کی قمتیں بڑھانے کے لئے اوگرا کا خط سما کو موصول ہوگیا ہے ۔۔ جس میں وزارت پٹرولیم کو سی این جی مہنگی کرنے کی سفارش کی گئی ہے ۔۔ بلوچستان اور پوٹھوہار ریجن کے لئے سی این جی تیس روپے نواسی پیسہ فی کلو ، سندھ اور پنجاب کے لئے چوبیس روپے اٹھاون پیسہ فی کلو اضافہ کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ اوگرا کی سفارش پر عملدرآمد کے نتیجے میں خیبرپختونخوا ، بلوچستان اور پوٹھوہار ریجن میں سی این جی کی نئی قیمت ستانوے روپے اکتیس پیسے جبکہ سندھ اور پنجاب میں ستاسی روپے انہتر پیسے فی کلو ہوجائے گی۔

کرنے

کی

نے

Video

green

Tabool ads will show in this div