ایان علی کس سے تنگ آگئی ہیں

Ayan Ali Case Upd ISB PKG 21-06

 

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے معاملے پراٹارنی جنرل کو معاونت کے لیے طلب کرلیا۔ جسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ  کیا ایان علی دہشتگرد ہے جو ہوم ڈیپارٹمنٹ نے ریفرنس بھیجا۔ایان علی نے تنگ آکر دوبارہ جیل جانے کی درخواست کردی۔

جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے خلاف وفاق کی اپیل پر سماعت کی۔ ایان علی  کے وکیل لطیف کھوسہ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ایان علی کا نام تیسری مرتبہ ای سی ایل میں شامل کیا گیا، وہ تنگ آکر کہتی ہیں کہ انہیں واپس جیل بھیج دیں۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ ہوم ڈیپارٹمنٹ پنجاب کے کہنے پر ایان علی کا نام ای سی ایل میں ڈالا گیا۔ اس پرجسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ کیا ایان علی دہشتگرد ہے جو ہوم ڈیپارٹمنٹ نے ریفرنس بھیجا، کیا پنجاب میں قتل کی ہر ایف آئی آر پر نام ای سی ایل میں شامل کیا جاتا ہے۔ انھوں نے کہاکہ  سندھ ہائی کورٹ میں سیکرٹری داخلہ بظاہر توہین عدالت کے مرتکب ہیں، کیوں نہ انہیں جیل بھیج دیں۔ جسٹس شیخ عظمت نے کہا کہ اپنے احکامات پر عمل کرانا جانتے ہیں۔

 عدالت نے اٹارنی جنرل کو معاونت کے لیے طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔  سماء

انٹرٹینمنٹ

Ayan Ali Case

currency scandal

Tabool ads will show in this div