دوران سال افراط زر کی شرح چار اعشاریہ دو فیصد پر لے آئے

Jun 17, 2016

AR-160609782.jpgMaxW780imageVersion16by9NCS_modified20160604173924-640x361

اسلام آباد: وزیر خزانہ اسحاق ڈار کہتے ہیں کہ زر مبادلہ کے ذخائر اکیس ارب ڈالر تک پہنچ گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سال کے دوران افراط زر کی شرح آٹھ اعشاریہ دو سے کم کر کے چار اعشاریہ دو فیصد پر لے آئے ہیں۔

قومی اسمبلی میں بجٹ بحث سمیٹتے ہوئے وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ گزشتہ ادوار میں قرضوں میں ہونے والے چار سو فیصد اضافے کی ذمہ دار موجودہ حکومت نہیں، انہوں نے کہا کہ صوبوں میں تفریق نہیں کرتے، پورا ملک ہمارے لئے برابر ہے ۔

وزیر خزانہ نے بتایا کہ حکومت نے زرعی مشینری پر ڈیوٹی کم کی ہے،  یوریا کھاد کی قیمت کو بائیس سو سے کم کرکے اٹھارہ سو پر لائے ہیں۔

قومی اسمبلی نے غیرملکی قرضہ لینے سے قبل ایوان کو اعتماد میں لینے کی سینٹ کی سفارش کی حمایت کر دی۔ شاہ جی گل آفریدی نے مطالبہ کیا کہ بلوچستان کی طرح فاٹا کیلئے بھی پیکیج کا اعلان کیا جائے۔

محمود اچکزئی نے کہا کہ بلوچستان کے لئے چھوٹے چھوٹے ڈیم بنانے پر توجہ دی جائے، قومی اسمبلی کا اجلاس کل صبح گیارہ بجے تک ملتوی کر دیا گیا۔ سماء

SENATE

finance minister

Tabool ads will show in this div