کورٹ نے این آر او فیصلے پر عملدرآمد کیلئے 10 جنوری تک مہلت دے دی

اسٹاف رپورٹ
اسلام آباد: انتہائی اہمیت کے حامل این آر او کیس میں سپریم کورٹ نے تمام متعلقہ افراد کو این آر او کیس فیصلے پر عملدرآمد کیلئے دس جنوری تک آخری مہلت دے دی ہے ۔۔

سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ اب بھی کارروائی نہ ہوئی تو حکم جاری کردیا جائے گا ۔۔۔ عدالت نے چئیرمین نیب اور پراسیکیوٹر آئندہ پیشی پر ذاتی طور سے پیش ہونے اور تحریری رپورٹ پیش کرنے کا حکم بھی دیدیا۔۔

جسٹس آصف کھوسہ کی سربراہی میں پانچ  رکنی خصوصی بنچ این آر او عملدرآمد کیس کی سماعت کر رہا ہے ۔۔ عدالت نے چئیرمین نیب ، سیکریٹری قانون، اٹارنی جنرل اور پروسیکیوٹر نیب کو ذاتی طور پر پیش ہونے کی ہدایت کردی ہے ۔۔ اور کہا ہے کہ اب تک عدالتی حکم پر عملدرآمد نہ ہونے کے برابر ہے ۔۔

نیب کو آئندہ پیشی پر تحریری رپورٹ بھی پیش کرنے کا حکم دیا گیا ہے ۔۔

اٹارنی جنرل نے کہا کہ سوئس عدالتوں کو ابھی تک خط نہیں لکھا جاسکا ۔۔ یہ معاملہ این آر او نظرثانی درخواست کی سماعت کی وجہ سے مؤخر کیا گیا تھا ۔۔ جسٹس آصف سعید کھوسہ کا کہنا تھا کہ اب تو اس نظرثانی درخواست کا فیصلہ ہو چکا ہے۔۔ خط کیوں نہیں لکھا گیا۔۔

آخری سماعت میں عدالت نے وزیراعظم کو نئی سمری بھجوانے کا کہا تھا ۔۔ سیکرٹری قانون آئندہ پیشی پر بتائیں کہ وزیراعظم کو سوئس خطوط کیلئے نئی سمری کا کیا بنا ۔۔ عدالت عظمٰی نے تمام متعلقہ افراد کو این آر او فیصلے پرعملدرآمد کیلئے دس جنوری تک حتمی مہلت دے دی ہے اور کہا ہے کہ اگر کوئی کارروائی نہ کی گئی تو عدالت حکم جاری کرے گی ۔۔

عدالت کا کہنا تھا کہ احمد رياض شيخ سزا يافتہ تھا، اس کی دوبارہ تقرری کی تحقيقات کی جائے۔۔ احمد ریاض شیخ کی تقرری کی سمری تیار کرنے والے قائم مقام سیکریٹری قانون بھی طلب کرلیا گیا ہے ۔۔ سماء

خبر دیکھنے کیلئے ویڈیو کا بٹن کلک کیجئے

پر

نے

فٹبال

دی

Cup

او

hostage

warrant

Tabool ads will show in this div