قرضے کی تمام پراڈکٹس کی پیشگی تفصیلات کا اظہار لازمی کردیا گیا

Jun 14, 2016

SBP

کراچی: اسٹیٹ بینک نے انفرادی، مکاناتی اور گاڑیوں کے قرضے کی تمام پراڈکٹس کی پیشگی تفصیلات کا اظہار لازمی کر دیا ہے۔

بینک دولت پاکستان نے صارفین کو معلومات پر مبنی فیصلے کرنے میں مدد دینے اور مالی پراڈکٹس پر ان کا اعتماد بڑھانے کے لیے "پراڈکٹ ڈسکلوژر ریکوائرمنٹس" (پی ڈی آر) تیار کی ہیں جو تمام اقسام کے انفرادی، مکاناتی اور گاڑیوں کے قرضے کی پراڈکٹس کا احاطہ کریں گی۔

یکم جنوری 2017ء سے بینکوں اور مائکرو فنانس بینکوں پر لازم ہوگا کہ وہ اپنے تمام ممکنہ صارفین کو شروع ہی میں پراڈکٹ کے اہم حقائق کا بیان (پراڈکٹ کی فیکٹ اسٹیٹمنٹ) پر فراہم کریں۔ اس اقدام کا مقصد مالی پراڈکٹس میں شفافیت اور اظہار کی موجودہ سطح کو بڑھانا ہے اور یہ اقدام ادائیگی سے پہلے کے طریقہ کار میں شامل ہوگا۔

تاہم بینک، مائکرو فنانس بینک "پی کے ایف ایس" میں مزید ایسی معلومات بھی شامل کر سکتے ہیں جو انہیں ضروری محسوس ہو۔ نیز یہ کہ بینک یا مائکرو فنانس بینک اپنے ریکارڈ کے لیے (پی کے ایف ایس) کی ایک ایسی نقل اپنے پاس رکھیں گے جس پر صارف اور بینک کے مجاز افسر کے دستخط ہوں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ مالکاری مصنوعات کے بڑھتے ہوئے تنوع اور پیچیدگی کے نتیجے میں، معلومات پر مبنی فیصلے کرنا مالی صارفین کے لیے دشوار ہو چکا ہے۔ اس حوالےسے مالکاری مصنوعات کے بارے میں متعلقہ، قابل بھروسہ اور تقابلی معلومات کی فراہمی، ساتھ ہی صارفین کے تحفظ کا مستحکم طریقہ کار ان کو مطلع کرنے کیلئے ضروری ہے، اس کے علاوہ یہ امر مالی شمولیت اور استحکام کے فروغ کے لیے بھی ضروری ہے۔

تمام بینکوں اور مائکرو فنانس بینکوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ پی ڈی آرز پر من و عن عمل کریں۔ خلاف ورزی یا عدم عملدرآمد کی صورت میں بینکنگ کمپنیز آرڈیننس 1962 کی متعلقہ شقوں کے تحت تادیبی کارروائی کی جائے گی۔ سماء

micro finance bank

Product Disclosure Requirements

Housing and Auto Finance

Tabool ads will show in this div