ترکی کا جرمنی پر دہشتگردوں کی پشت پناہی کا الزام

People-in-Turkey انقرہ : ترک میڈیا کی جانب سے جرمنی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ جرمنی دہشت گردوں کا معاون ہے۔ ترک اخبار ’گیونیس‘ نے رواں ہفتے اپنی ایک رپورٹ میں الزام عائد کیا ہے کہ تین جون کو استنبول میں ہونے والا دہشت گردی کا حملہ جرمنی کی جانب سے ترکی کے خلاف ایک اور کارروائی تھی۔ اخبار کے مطابق پہلے تو جرمن پارلیمان نے سلطنت عثمانیہ کے ہاتھوں آرمینیائی باشندوں کے قتل عام کو نسل کشی قرار دینے کی منظوری دی اور پھر استنبول میں یہ دہشت گردی کی کارروائی کی۔ اخبار کے مطابق جرمن پارلیمان کے منظوری کے بعد ترک ردعمل کی وجہ سے جرمنی نے یہ حملہ کیا جس میں گیارہ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ اس اخبار کے مرکزی صفحے پر دہشت گردی کے حملے کی تصویر کے ساتھ یہ شہ سرخی تھی، ’جرمن کارنامہ۔ اس رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ استنبول میں دہشت گردی کی کارروائی کے ذریعے جرمنی نے ترکی کی توجہ آرمینیائی معاملے سے ہٹانے کی کوشش کی۔ واضح رہے کہ جرمنی وہ 26واں ملک ہے، جس نے ترک عثمانیہ سلطنت میں 1915ءمیں آرمینیائی باشندوں کے قتل عام کو نسل کسی قرار دیا ہے۔ سماء

ALLEGATIONS

Tabool ads will show in this div