بیٹیوں کے قتل کا معاملہ، خطیب بادشاہی مسجد آبدیدہ ہوگئے

Badshahi Masjid Khudba 1400 Lhr 10-06

[video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/06/Badshahi-Masjid-Khudba-1400-Lhr-10-06.mp4"][/video]

لاہور : لاہور میں پے درپے بیٹیوں کو قتل کرنے کے واقعات پر بادشاہی مسجد کے خطیب بھی بھڑک اٹھے، خطبہ جمعہ میں وعظ کے دوران اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے اور رو دیئے، بولے کہ بیٹیاں رحمت ہوتی ہیں، بچیوں کو قتل کرنیوالوں کو چوراہے پر لٹکانا چاہئے۔

لاہور میں سنگدل ماں کے ہاتھوں بیٹی کو جلانے کے واقعے کے بعد آج ایک سفاک باپ نے پسند کی شادی کرنیوالے اپنی بیٹی اور داماد کو قتل کردیا، غیرت کے نام پر بے رحمانہ عمل کی نا صرف معاشرے بلکہ اسلام نے بھی سخت مذمت کی ہے۔

لاہور کی بادشاہی مسجد کے خطیب سید ابوالخیر آزاد رمضان المبارک کے پہلے خطبہ جمعہ کے موقع پر ایسے سفاک لوگوں کا ذکر کرتے ہوئے اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے اور رو دیئے، انہوں نے انتہائی سخت لہجے میں ایسے لوگوں کو چوراہے پر لٹکانے کا مطالبہ کیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ بیٹیاں رحمت ہوتی ہیں، اللہ ان کی بدولت والدین پر جنت کے دروازے کھولتا ہے، بیٹیوں کو قتل کرنیوالوں کو سخت سے سخت سزا دینی چاہئے۔ سماء

 

honor killing

Badshahi Masjid

Khateeb

Mother Burn Daughter

Tabool ads will show in this div