لندن یاترا کے دوران مرزا کے لیکچر میں ہنگامہ آرائی

اسٹاف رپورٹ
لندن : تند و تیز بیانات سے سیاسی ہلچل پیدا کرنے والے سابق وزیر داخلہ سندھ کو لندن یاترا کے دوران  ناخوش گوار صورت حال کا سامنا کرنا پڑگیا۔

آکسفورڈ یونی ورسٹی میں ذوالفقار مرزا کے لیکچر کے دوران ہنگامہ آرائی کی گئی۔ سابق صوبائی وزیر داخلہ کہتے ہیں کہ ہنگامہ آرائی کرنے والوں کو منصوبے کے تحت بھیجا گیا۔

ذوالفقار مرزا نے جب بھی شعلہ بیانی کی اس کی تپش صرف ایوانوں میں ہی محسوس نہیں کی گئی بلکہ سڑکیں بھی جلتی نظر آئیں لیکن اب ان کی لندن یاترا میں بھی گرماگرمی دیکھنے میں آئی ہے۔

ذوالفقار مرزا نے آکسفورڈ یونی ورسٹی میں اپنے لیکچر کے دوران جب ایم کیو ایم کا ذکر چھیڑا تو ہال میں موجود بعض افراد مشتعل ہوکر اٹھ کھڑے ہوئے۔ انہوں نے مرزا کو نہ صرف تنقید کا نشانہ بنایا بلکہ بینظیر بھٹو کے حق میں نعرے بھی لگائے۔

احتجاج کرنے والوں کا کہنا تھا کہ مرزا الطاف حسین کے خلاف الزامات واپس لیں۔ منتظمین نے مشتعل افراد کو ہال سے نکال دیا۔ واقعہ پر مرزا کاکہنا تھا کہ ہنگامہ آرائی کرنے والوں کو منصوبے کے تحت بھیجا گیا تھا۔

ذوالفقار مرزا کا کہنا ہے کہ کراچی میں قتل عام بند ہونے تک وہ کوششیں جاری رکھیں گے۔ ذوالفقار مرزا نے مزید کہا کہ اسکاٹ لینڈ یارڈ چاہتی ہے کہ وہ مزید کچھ دن لندن میں قیام کریں۔سماء


 


ویڈیو دیکھنے کیلئے نیچے دیئے گئے ویڈیو کے لنک پر کلک کریں

میں

کے

Qadri

Airport

trouble

Tabool ads will show in this div