سیکریٹری دفاع ليفٹيننٹ جنرل ريٹائرڈ لودھی برطرفی ہائیکورٹ ميں چيلنج

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
لاہور : ليفٹيننٹ جنرل ريٹائرڈ نعيم خالد لودھی کی سيکریٹری دفاع کے عہدے سے برطرفی کو لاہور ہائی کورٹ ميں چيلنج کر ديا گيا ہے۔

عدالت ميں درخواست مقامی وکيل اظہر صديق کی جانب سے دائر کی گئی ہے۔


درخواست گزار نے مؤقف اختيار کيا ہے کہ کسی بھی سرکاری ملازم کو نوکری سے ہٹانے کے ليے اظہار وجوہ کا نوٹس جاری کرنا ضروری ہے۔

نعيم لودھی کو سنے بغير ہی برطرف کر ديا گيا۔ درخواست گزار کا يہ بھی کہنا تھا کہ حکومت اگر کسی عدالتی فيصلے پر عمل نہ کرے تو عدالت فوج کو بزريعہ سيکریٹری دفاع عمل درآمد کا کہہ سکتی ہے۔ 

اس ليے حکومت نے سيکریٹری دفاع کو برطرف کيا تاکہ اين آر او اور ميمو گيٹ مقدمات ميں رکاوٹ ڈالی جاسکے۔


درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ سيکریٹری دفاع کا اضافی چارج سنھبالنے والی نرگس سيٹھی کو کام سے روکا جائے اور نعيم خالد لودھی کو بحال کيا جائے۔ سماء


ویڈیو دیکھنے کیلئے نیچے دیئے گئے ویڈیو کے لنک پر کلک کریں

Army Public School

ہائیکورٹ

bridge

Tabool ads will show in this div