ایان علی کی مشکل آسان ہوگئی

AYYAN

کراچی: سندھ ہائیکورٹ نے کرنسی اسمگلنگ کیس میں ملوث ماڈل ایان علی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کا حکم دے دیا۔ وفاق کو اپیل کے لیے سات دن کی مہلت بھی دے دی گئی۔ ایان علی کی جانب سے دائر کردہ توہین عدالت کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئےسندھ ہائیکورٹ نے ملزمہ کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم جاری کر دیا۔ نام نکالے جانے کے بعد ایان علی بیرون ملک جا سکیں گی۔

وفاقی حکومت  کو ای سی ایل سے ایان علی کا نام نکالنے کے خلاف  اپیل کے لیے سات روز دیے گئے ہیں۔ سندھ ہائیکورٹ نے ریمارکس دیے کہ اگروفاقی حکومت کوفیصلے پرتحفظات ہیں تو سات روز کے اندر اپیل دائرکی جا سکتی ہے۔

مزید پڑھیے:ایان علی کے عدالتوں کے چکر جاری

واضح رہے کہ وزارت داخلہ نے ایان علی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکال کرایف آئی کے اعتراض کے بعد دوبارہ ای سی ایل میں ڈال دیا تھا جس پر ایان علی نے سپریم کورٹ میں متعلقہ حکام کے خلاف توہین عدالت کی درخواست دائرکی تھی۔

AYAN CONTEMPT PETITION 1600 PKG HASSAN ABBAS 22-04

سپریم کورٹ نے ایان علی کی درخواست نمٹاتے ہوئے انہیں معاملے پرسندھ ہائیکورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کی تھی۔ جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیے تھے کہ ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا فیصلہ سندھ ہائی کورٹ کا تھا جسے ہم نےبرقراررکھنے کا حکم سنایا تھا۔ سپریم کورٹ پر مقدمات کا بوجھ پہلے ہی زیادہ ہے اس لیے ایان علی فیصلے پرعملدرآمد کے لیے سندھ ہائی کورٹ سے رجوع کریں۔ سماء

ECL

currency smuggling case

تبولا

Tabool ads will show in this div

تبولا

Tabool ads will show in this div