سمر ایکس چینچ پروگرام،19پاکستانی خواتین امریکا روانہ

May 31, 2016
2 کراچی : امریکی قونصلیٹ نے انیس پاکستانی خواتین کو ‘‘سمر ایکسچینج پروگرام’’ کے تحت امریکا بھجوایا دیا۔ کراچی کے امریکی قونصل خانے کی جانب سے جاری بیان کے مطابق سمر ایکسچینج پروگرام کے تحت امریکا جانے والی انیس پاکستانی خواتین کو کراچی ایئرپورٹ پر الوادع کیا گیا، روانگی سے قبل قونصل جنرل نے شرکاء سے گفت گو کرتے ہوئے کہا کہ سمر سسٹرز 2016 ایکسچینج پروگرام’’ میں حّصہ لینے والی تمام شرکا کو دلی مبارک باد پیش کرتا ہوں، اس موقع پر قونصل جنرل برائن ہیتھ نے پروگرام کے پارٹنر آئی ارن، یو ایس پاکستان وومنز کونسل اور امریکی یونیورسٹی کا شکریہ بھی ادا کیا۔ تقریب میں  آئی ارن کی سی ای او فرح کمال،  آئی ارن کے جنرل منیجر سلیم ابراہیم، افسر برائے عوامی امور لی پنگ لو اور ثقافتی اتاشی گریفن روزیل بھی موجود تھے۔ 1 برائن ہیتھ کا مزید کہنا تھا کہ پاکستانی خواتین دونوں قوموں کی ثقافتی سفیر بن کر جارہی ہیں اور بطور سمر سسٹر دانشورانہ اور قیادت کی صلاحیتیں پروان چڑھنے کا بہترین موقع ہے،خواتین میں پاکستان اور ملک سے باہر قیادت کرنے کی صلاحتیں موجود ہیں۔ سمر سسٹرز پروگرام کیا ہے؟ یو ایس سمر سسٹرز پروگرام کا آغاز 2013 ء  میں یو ایس پاکستان وومنز کونسل نے کیا، پروگرام کے تحت پس ماندہ طبقات کی  15 سے 18 سالہ باصلاحیت پاکستانی طالبات کو 2 سے آٹھ ہفتوں تک بہترین امریکی یونیورسٹیوں میں تعلیم کے لیے بھیجا جاتا ہے۔ یو ایس پاکستان وومنز کونسل: یو ایس پاکستان وومنز کونسل امریکی وزیر خارجہ ہلیری کلنٹن نے 2012 ء میں قائم کی تھی جس کا مقصد پاکستان کی معاشی سرگرمیوں میں خواتین کے شراکت میں اضافہ کرنا تھا۔ یو ایس پاکستان وومنز کونسل خواتین کی تعلیم، ان کے روزگار اوربزنس میں انھیں نمایاں مقام دلانے کے لیے کام کرتی ہے جس کے لیے امریکا اور پاکستان میں سرکاری اور نجی شعبے اور سول سوسائٹی کے نمایاں افراد کی خدمات حاصل کرتی ہے۔ سماء

pakistani women

U.S. Consulate

Brian Heath

Tabool ads will show in this div