ہائی کورٹ میں منصوراعجاز کیخلاف مقدمے کی درخواست خارج

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
اسلام آباد : میمو اسکینڈل کے مرکزی کردار منصور اعجاز کی جو گرفتاری کے خوف سے آزاد ہو کر چوبیس جنوری کو پاکستان پہنچ سکیں گے۔ اسلام آباد کی عدالت نے ان کے خلاف مقدمہ درج کرانے کی درخواست خارج کردی ہے۔

اسلام آباد کے ایڈیشنل سیشن جج سید وجاہت حسن نے پیپلزپارٹی کے رہنما خالد جاوید ستی کی جانب سے دائر درخواست کی سماعت کی۔ درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ میمو کیس کے مرکزی کردار منصور اعجاز کے خلاف پاکستان مخالف آرٹیکلز لکھنے پر سنگین نوعیت کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا جائے۔

تھانہ سیکریٹریٹ پولیس نے بھی اپنا موقف عدالت میں پیش کیا ۔ عدالت نے کیس کی سماعت مکمل کرکے فیصلہ محفوظ کرلیا۔ دوگھنٹے بعد ایڈیشنل سیشن جج وجاہت حسن نے فیصلہ سنایا اور منصور اعجاز کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست خارج کردی۔ اس سے پہلے وفاقی سیکریٹری داخلہ اور اٹارنی جنرل نے عدالتی کمیشن کو یہ یقین دہانی کروانے سے انکار کر دیا تھا کہ منصور اعجاز کے خلاف پاکستان آمد پر مقدمہ درج نہیں کیا جائے گا۔ سماء

میں

کی

درخواست

کیخلاف

dates

receive

marred

Tabool ads will show in this div