جاں بحق تین وکلاء کو کراچی میں سپرد خاک کردیاگیا

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ


کراچی: کراچی میں گذشتہ روزٹارگٹ کلنگ میں جاں بحق تین وکلاء کو ماڈل کالونی کےمقامی قبرستان میں سپرد خاک کردیاگیا۔۔مشتعل افراد نے نیشنل ہائی وے پر ٹائرجلائے اور احتجاج کیا۔ وزیرداخلہ سندھ منظوروسان نےفرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ میں ملوث عناصر کی گرفتاری کےلئے عوام سے مددمانگ لی۔۔۔


ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنےوالے تین وکلا کفیل جعفری،شکیل جعفری اوربدرمنیرجعفری کی نمازجنازہ ملیرکالا بورڈ نینشنل ہائی وے پر ادا کی گئی۔نمازجنازہ میں وکلاء برادری سمیت اہل علاقہ نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔۔۔نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد مشتعل افراد نے ٹائرجلائےاوراحتجاج کیا۔۔تینوں جنازوں کو جلوس کی شکل میں ماڈل کالونی قبرستان لایاگیا۔اس دوران جلوس کے شرکاء نعرے بازی کرتے رہے۔


  تینوں مقتولین کو ماڈل کالونی قبرستان میں سپردخاک کیاگیا۔اس موقع پر رقت آمیز مناظردیکھنے میں آئے۔شیعہ علماء کونسل کے رہنما محمد علی کاکہناتھاکہ حکومت انہیں تحفظ دینے میں ناکام ہوگئی ہے۔


 دوسری جانب وزیرداخلہ منظوروسان نےپریس کانفرنس میں اعلان کیاہےکہ فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ میں ملوث ملزمان کی نشاندہی کرنے والوں کو دس لاکھ روپے انعام دیاجائےگا۔


 منظوروسان کا کہناہےکہ گواہوں کو تحفظ دینے کا بل بھی جلد سندھ اسمبلی میں پیش کیاجائےگا۔جس کے بعد گواہوں کو مکمل تحفظ دیاجائےگا. سماء

میں

burger

کو

Inqilab March

Tabool ads will show in this div