غیرمستحکم افغانستان ہمسائیوں کےحق میں بہترنہیں،پاکستان

May 19, 2016

Pakistan-Foreign-Office

اسلام آباد: پاکستان نے واضح کردیا ہےکہ غیر مستحکم افغانستان ہمسائیوں کے حق میں بہتر نہیں۔ امن مذاکرات کے راستے میں مشکلات حائل ہیں۔ سیکریٹری خارجہ اعزاز چودھری کہتے ہیں کہ طالبان کی سپورٹ کا الزام لگانا غلط ہے۔

اسلام آباد میں ہفتہ وار پریس بریفنگ کرتے ہوئے ترجمان دفترخارجہ نے بتایاکہ پاکستان کا امن افغانستان کے امن سے مشروط ہے۔ انھوں نے پاک افغان اعتماد سازی کیلئے ہر سطح پر مذاکرات کو ناگزیرقراردیا۔ اعزاز چودھری نے بتایاکہ افغان امن عمل میں مشکلات حائل ہیں۔ پاکستان کی نیت پر شک کرنا درست نہیں۔

سیکریٹری خارجہ اعزاز چودھری کا کہنا تھاکہ طالبان نے اب تک پاکستان کی کوششوں کا مثبت جواب نہیں دیا،لیکن ہمیں امید ہے کہ چارفریقی گروپ کی کوششیں بارآور ثابت ہونگی، مغربی حکام پاکستان کے بارے میں یہ تصور پیش کرتے ہیں کہ طالبان پاکستان کے کنٹرول میں ہیں،ایسی تصویر پاکستان سے ناقابل یقین توقعات پیدا کرتی ہے۔

سیکرٹری خارجہ نے کہا کہ پاکستان کے خلاف افغانستان کے بیانات امن مذاکرات کے اقدامات میں مشکلات پیدا کر رہے ہیں۔ افغانستان کے ایک حصے میں داعش اور دوسرے میں ازبک کی موجودگی کی اطلاعات ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے بھی ہفتہ وار نیوز بریفنگ میں افغان مسئلے کا حل صرف مذاکرات قراردیا۔ انھوں نےکہاکہ ہمیں امن کو موقع دینا ہوگاکیونکہ اس سے بہتر آپشن ہمارے پاس نہیں ہے۔  سماء

FOREIGN OFFICE

Tabool ads will show in this div