عمران خان بھی آف شورکمپنی کےمالک نکلے

May 17, 2016

Imran-Khan-and-Nawaz-Sharif-680x408

تحریر:جہانزیب منہاس

دوروزقبل حیرت کی انتہاء نہ رہی جب یہ خبر دیکھی کہ عمران خان صاحب کی آف شور کمپنی تھی ۔ پھر کیا تھا کچھ ٹی وی چینلز کی تو چاندی ہو گئی ۔ساری رات ناچ گانا اور دھمال کے ساتھ یہ دکھاتے رہے کہ عمران خان کی بھی آف شور کمپنی ہے۔ دل میں جستجو ہوئی کہ اس بات کا پتہ لگایا جائے کہ عمران خان کو کمپنی کی ضرورت کیوں پیش آئی اور جب یہ راز آشکارہ ہوا کہ خان صاحب کی آف شور کمپنی تو اس لئے بنائی گئی تھی کہ بیرون ملک میں کمایا گیا پیسہ پاکستان منتقل کرنا تھا اور خان صاحب یہ چاہتے تھے کہ ان کے پیسہ پر حکومت برطانیہ کو ٹیکس نہ ادا کیا جائے۔اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ عمران خان کی آف شور کمپنی سے پاکستان اور اس کے مفادات کو کسی قسم کا نقصان نہیں پہنچا۔

MARYAM KHAWAJA ASIF TWEET PKG 14-05

 حکومتی وزرا ء بشمول متحرمہ مریم نواز صاحبہ عوام کو اس بار بھی ماموں بنانے کے چکر میں ہیں اورانہوں نے بھی ٹویٹ کر دیا کہ عمران خان آف شور کمپنیوں کے بھی کپتان نکلے۔مگر سوال تو سب سے بڑا یہ ہے کہ آف شور کا مسئلہ کیا ہے؟ اپوزیشن کیا اس لئے شور کر رہی ہے کہ کسی کی آف شور کمپنی ہے یا اس لئے شور کر رہی ہے کہ ان تمام رقوم کا ریکارڈ عوام کے سامنے پیش کیا جائے۔ جن سے یہ آف شور کمپنیاں بنائی گئی ہیں اور اگر عمران خان صاحب کی آف شور کمپنی کسی چوری کے مال سے بنائی گئی تھی اورپاکستان کے ٹیکس کے پیسے سے بنائی گئی تھی تو محترمہ آپ کے والد گرامی کی حکومت ہے اس پر ایکشن لیں۔ خان صاحب کی املاک کو قبضے میں لیں اور ان کی نیلامی کردیں۔

Nawaz,-Maryam

یہ پیسہ پاکستانی عوام کی امانت ہے ،اس کو وزارت خزانہ میں جمع کروائیں مگر اس تمام پیسے کا بھی حساب  دیں جو آپ کے ابا جان ،بھائی جان ،امی جان ،اور آپ کے نام پر ملک سے باہر اس وقت گیا ہے جب آپ کے والد محترم اس غریب ملک کے سربراہ تھے۔ عمران خان کی آف شور کمپنی 1983 میں بنی اور جب وہ لندن والا فلیٹ بیج کر پیسہ پاکستان لائے اس کے ساتھ ہی بند بھی ہوگئی جس کی سالانہ آمدن 395 ڈالر تھی مگر محترمہ ان آف شور کمپنیوں کا کیا ہوگا جو آپ کے اور آپ کے خاندان کی ہیں، جن کی سالانہ آمدن اربوں ڈالر میں ہے اور آپ کے پاس اس ایک روپے کا بھی حساب نہیں ہے اور نہ ہی عوام کو دینا  چاہتے ہیں۔

Nawaz Family Panama

  عمران خان نےبغیر کسی توقف کے مان لیا کہ جی ہاں ،میں نے آف شور کمپنی بنائی تھی تاکہ پیسہ پاکستان منتقل کیا جاسکے  مگر آپ کی تمام آف شور کمپنیاں پیسہ پاکستان سے بیرون ممالک منتقل کرنے لئے بنائی گئیں۔ عمران خان صاحب کی کمپنی بنائی گئی نیازی  سروسزکے نام سے اور آپ کی آف شور بنائی گئی نیلسن  کے نام سے تاکہ کسی کو شک بھی نہ گزرے ۔ آپ اور آپ کے بھائیوں اور خاندان کے دیگر افراد نے اس وقت تک آف شور کمپنی کا اعتراف نہ کیا جب تک پاناما لیکس میں ساری حقیقت کھل کر سامنے نہیں آگئی۔

ملک سے پیسہ لوٹ کر باہر لے کر جانے والے اور باہر سے پیسہ کما کر ملک میں لانے  والے کیسے برابر ہو سکتے ہیں ، اس بات کا فیصلہ جلد از جلد ہونا اہم ہوگا۔

IMRAN KHAN

Panama leaks

panama papers

off shore company

Tabool ads will show in this div