لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ ایک اور مقدمے میں بری

لیاری گینگسٹرعزیر بلوچ کے خلاف قتل کیس کا فیصلہ سنادیا گیا

عدالت نے لیاری گینگ وار کے سرغنہ اور کالعدم پیپلز امن کمیٹی کے چیئرمین عزیر بلوچ کو ایک اور مقدمے میں بری کردیا۔

لیاری گینگ وارعزیر بلوچ کے خلاف قتل کیس کا فیصلہ سنادیا گیا۔ عدالت نےعدم شواہد پرعزیربلوچ کو ایک اور مقدمے میں بری کردیا جبکہ شریک ملزم ذاکرعرف ڈاڈا کو بھی عدم ثبوت پربری کردیا گیا۔

فیصلے میں کہا گیا ہے کہ پراسیکیوشن ملزمان کے خلاف الزامات ثابت کرنے میں ناکام رہی۔ وکیل عزیر بلوچ عابد زمان کا کہنا ہے کہ عزیر بلوچ پر جھوٹے الزامات عائد کیے گئے۔ گواہان کے بیانات میں تضاد ہے۔

عزیربلوچ اور ذاکر ڈاڈا پر مخالف گینگ کے رکن عمران کوقتل کرنے کا الزام تھا۔ ملزمان نے2012 میں فائرنگ کرکے عمران کو قتل کیا تھا۔ ملزمان کے خلاف کراچی کے علاقے کلاکوٹ تھانے میں مقدمہ درج ہے۔

واضح رہے کہ لیاری گینگ وار کے سرغنہ اور کالعدم پیپلز امن کمیٹی کے چیئرمین عزیر بلوچ اب تک 60 میں سے25 مقدمات میں بری ہوچکے ہیں۔

uzair baloch

Karachi Police

Tabool ads will show in this div