مشکل معاشی حالات کے باوجود کئی شعبوں کی برآمدات میں اضافہ

سمندری حیات، طبی آلات، فرنیچر، کھیلوں کا سامان اور انجنیئرنگ گڈُز کی برآمدات بڑھ گئیں

موجودہ مالی سال مشکل معاشی حالات کے باوجود کئی شعبوں کی برآمدات کے حجم میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔

وفاقی ادارہ شماریات کے مطابق رواں مالی سال پاکستان کے لیے معاشی لحاظ سے انتہائی مشکل ہے لیکن اس کے باوجود پہلی ششماہی (جولائی تا دسمبر 2022) کے دوران پاکستان کی مجموعی برآمدات کا حجم 14 ارب ڈالر سے زیادہ ریکارڈ کیا گیا۔

معاشی بحران اور مشکلات کے باوجود کئی شعبوں کی برآمدات میں اضافہ بھی دیکھا گیا۔

اعداد و شمار کے مطابق کیمیکلز اور فارما سوٹیکل کی برآمد 4 فیصد اضافے سے 70 کروڑ ڈالر رہی۔ انجینئرنگ گڈز کی ایکسپورٹ کا حجم 18 فیصد بڑھ کر 12 کروڑ 78 لاکھ ڈالر ریکارڈ کیا گیا۔

کھیلوں کے سامان کی ایکسپورٹ 27 فیصد اضافے سے 20 کروڑ 86 لاکھ ڈالر رہی۔ صرف فٹبال کی برآمد 53 فیصد اضافے کے ساتھ 12 کروڑ ڈالر سے زیادہ ریکارڈ کی گئی۔

سرجیکل گڈز اور طبی آلات کی برآمدات ساڑھے 8 فیصد بڑھ کر 22 کروڑ 35 لاکھ ڈالر ہوگئیں۔ فٹ ویئر کی برآمدات کا حجم 26 فیصد اضافے کے ساتھ 9 کروڑ ڈالر سے زائد رہا۔

اسی طرح فرنیچر کی برآمد 92 فیصد بڑھ کر 77 لاکھ ڈالر کی سطح پر آگئی۔ مچھلی، گُڑ، الیکٹرک پنکھے، ٹرانسپورٹ کا سامان، قیمتی پتھر اور قالین کی ایکسپورٹ میں بھی اضافہ ہوا۔

دوسری جانب ملکی معیشت کیلئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھنے والے ٹیکسٹائل سیکٹر کی برآمد 7 فیصد کمی سے 8 ارب 71 کروڑ ڈالر رہی۔

exports

financial crisis

Pakistan Exports

Tabool ads will show in this div