محکمہ لائیو اسٹاک نے مقامی سطح پر لمپی ویکسین تیار کرلی

لمپی ویکیسن بنانے میں 10 سے 15 روپے لاگت آئے گی

ڈی جی لائیو اسٹاک ڈاکٹر نذیر حسین اور ان کی ٹیم نے مقامی سطح پر لمپی ویکسین تیار کرلی۔

محکمہ لائیو اسٹاک نے مقامی سطح پر لمپی ویکسین تیار کرلی ہے، جس کے بعد پاکستان بھی ترکیہ، روس، اردن اور ساؤتھ افریقہ کے ساتھ لمپی ویکسین بنانے والے ممالک میں شمار ہوگیا ہے۔

مقامی سطح پر بننے والی لمپی ویکسین ڈی جی لائیو اسٹاک ڈاکٹر نذیر حسین اور ان کی ٹیم نے تیار کی ہے، جن کے مطابق پاکستان میں لمپی ویکیسن کی تیاری پر 10 سے 15 روپے لاگت آئے گی۔

ڈی جی لائیو اسٹاک ڈاکٹر نذیر حسین کا کہنا تھاکہ گزشتہ سال ترکیہ سے 4 ملین ڈوز لمپی ویکسین درآمد کی تھی، اور فی خوراک پر ڈھائی سو روپے لاگت آئی تھی، اور مجموعی طور پر 3.9 ملین کو لمپی ویکسین لگائی گئی تھی، جب کہ سندھ میں 9 ملین گائے موجود ہیں۔

ڈاکٹر نذیر حسین نے بتایا کہ اس وقت ترکیہ، روس، اردن اور ساؤتھ افریقہ لمپی ویکسین تیار کر رہے ہیں، اور اب پاکستان بھی ویکسین بنانے والے ممالک میں شامل ہوگیا ہے، محکمہ لائیواسٹاک سندھ کی تیارکردہ کم قیمت لمپی ویکسین جلد مارکیٹ میں دستیاب ہوگی۔

Tabool ads will show in this div