کراچی ، حیدرآباد ڈویژن میں بلدیاتی انتخابات؛ کئی مقامات پر سیاسی کارکن الجھ پڑے

کراچی، حیدرآباد ، بدین اور دادو میں سیاسی جماعتوں کے کارکنوں میں جھگڑے

کراچی اور حیدرآباد ڈویژن میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے دوران کئی مقامات پر سیاسی کارکن آپس میں جھگڑ پڑے ہیں۔

کراچی کے 7 اور حیدر آباد ڈویژن کے 9 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کے لئے پولنگ ہوئی۔

ووٹنگ کے دوران کئی مقامات پر سیاسی کارکن آپس میں الجھ پڑے جب کہ بعض مقامات پر الیکشن کیمپوں کو ہی نذر آتش کردیا گیا۔

بن قاسم پپری میں پی پی اور پی ٹی آئی کارکن الجھ پڑے

کراچی کے ضلع ملیر میں بن قاسم پپری کے علاقے میں پاکستان پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف کے کارکن الجھ پڑے ۔ اس دوران پی ٹی آئی اور پیپلز پارٹی کے کارکنان نے ایک دوسرے کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔

جھگڑےکےبعد پولنگ کاعمل عارضی طورپرروک دیاگیا جب کہ پولیس کی بھاری نفری بھی پولنگ اسٹیشن پہنچ گئی۔

بدین میں پریزائیڈنگ افسر کو دھمکیاں دینے کا معاملہ

بدین میں بلدیاتی انتخاب کے دوران پریزائیڈنگ افسر کو دھمکیاں دینے والے ایک ملزم حاجی نظامانی کو پولیس نے گرفتار کرلیا جبکہ اس کا ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے تحت ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

بدین میں جھگڑے کے دوران ایک شخص زخمی

بدین کی یو سی 37 میں پیپلزپارٹی اور آزاد امیدوار میں جھگڑے کے دوران ایک شخص زخمی ہوگیا

دادو میں جیالوں اورپی ٹی آئی کارکن الجھ پڑے

گورنمنٹ پائلٹ ہائی اسکول دادو میں پیپلزپارٹی کے ایم پی اے کارکنوں کے ہمراہ ووٹ کاسٹ کرنے پہنچے تو ی ٹی آئی کارکنوں نے پی پی پی ایم پی اے کو ووٹ کاسٹ کرنے سے روک دیا، جس پر ایم پی اے نے اکیلے جاکر ووٹ کاسٹ کیا۔

SINDH LOCAL BODIES ELECTION

KARACHI LOCAL BODIES ELECTIONS

Tabool ads will show in this div