کراچی ٹیسٹ؛ پاکستان پر شکست کے بادل منڈلانے لگے

پاکستان نے اپنی دوسری اننگز میں 2 وکٹوں کے نقصان پر 77 رنز بنالئے

کراچی ٹیسٹ کے چوتھے دنپاکستان نے دن کے اختتام پر اپنی دوسری اننگز میں 2 وکٹوں کے نقصان پر 77رنز بنالئے ہیں جب کہ اب بھی قومی ٹیم کو 97 رنز کے خسارے کاسامنا ہے۔

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان 2 میچز پر مشتمل ٹیسٹ سیریز کا پہلا مقابلہ کراچی کے نیشنل بینک کرکٹ ارینا میں جاری ہے۔

اکیویز بلے بازوں نے پاکستان کی ناصرف برتری ختم کردی بلکہ اب برتری بھی بڑھانی شروع کی اور 612 رنز پر پہلی اننگز ڈکلیئر کردی۔

پاکستان نے 174 رنز کے خسارے کے ساتھ اپنی دوسری اننگز شروع کی ہے۔

پاکستان نے دن کے اختتام پر اپنی دوسری اننگز میں 2 وکٹوں کے نقصان پر 72رنز بنالئے ہیں جب کہ اب بھی قومی ٹیم کو 102 رنز کے خسارے کاسامنا ہے۔

پاکستان پر شکست کے بادل

پاکستان نے 174 رنز کے خسارے کے ساتھ دوسری اننگز کا آغاز کیا۔ عبداللہ شفیق اور امام الحق اس خسارےکو پورا کرنے میدان میں اترے۔

47 رنز پر پاکستان کی پہلی وکٹ گری، عبداللہ شفیق دوسری اننگز میں بھی قابل ذکر بلے بازی نہ کرسکے، وہ صرف 17 رنز ہی بناسکے۔

امام الحق کا ساتھ نبھانے شان مسعود کریز پر آئے لیکن 71 رنز پر وہ بھی پویلین لوٹ گئے، انہوں نے 10رنز ہی بنائے۔

میچ کے اختتام کے باعث نعمان علی کو نائٹ واچ مین کے طور پر میدان میں اتارا گیا۔

پاکستان نے دن کے اختتام پر اپنی دوسری اننگز میں 2 وکٹوں کے نقصان پر 72رنز بنالئے ہیں جب کہ اب بھی قومی ٹیم کو 102 رنز کے خسارے کاسامنا ہے۔

نیوزی لینڈ کی 174 رنز کی برتری

نیوزی لینڈ نے چوتھے دن اپنی پہلی اننگزکا دوبارہ آغاز کیا تو اس کا اسکور 6 وکتوں کے نقصان پر 440 رنز تھا۔

کین ولیمسن اور اش سدھی نے 2 رنز کی برتری کے ساتھ پاکستان کے خلاف دوبارہ بیٹنگ شروع کی۔

کین ولیمسن اور اش سدھی نے ساتویں وکٹ کی شراکت میں 159 رنز کا اضافہ کیا۔ 595 رنز ابرار احمد نے یہ پارٹنر شپ سدھی کی وکٹ لے کر توڑی، سدھی 62 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

596 رنز پر نیوزی لینڈ ک آٹھویں اور 597 رنز پر نویں وکٹ گری۔ کین ولیمسن نے سب سے آخری کھلاڑی اعجاز پٹیل کے ساتھ مل کر اسکور کو 612 رنز تک پہنچایا۔

کین ولیمسن کی ٹیسٹ کیرئیر میں پہلی ڈبل سنچری مکمل ہوتے ہی نیوزی لینڈ نے اپنی اننگز ڈکلیئر کردی۔

تیسرا دن لیتھم اور ولیمسن کے نام

ٹیسٹ میچ کا تیسرا دن شروع ہوا تو نیوزی لینڈ نے پاکستان کے 438 کے جواب میں 165 رنز سے اپنی اننگز دوبارہ شروع کی۔

پاکستانی بولرز نے پورے دن کیویز کی بیٹنگ لائن کو آؤٹ کرنے کی بھرپور کوشش کی لیکن اس کے باوجود وہ صرف 6 کھلاڑی ہی آؤٹ کرسکے۔

دن کے اختام تک نیوزی لینڈ نے ٹام لیتھم اور کین ولیمسن کی سنیچریوں کی بدولت اسکور کو 440 پر پہنچا دیا۔

دوسرے دن کا کھیل

ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن پاکستان 438 رنز بناکر آؤٹ ہوگئی تھی۔ دوسرے دن کھیل کی سب سے خاص بات آغا سلمان کی ٹیل اینڈرز کے تعاون سے بنائی گئی سینچری تھی۔

جواب میں نیوزی لینڈ نے دن کے اختتام تک بغیر کسی نقصان کے 165 رنز بنائے تھے۔

پہلا دن سرفراز اور بابر کے نام

ٹیسٹ میچ کے پہلے دن کھانے کے وقفے سے پہلے ہی پاکستان کے 4 کھلاڑی آؤٹ ہوگئے تھے، اس موقع پر 4 سال بعد ٹیسٹ میچ کھیلنے والے سرفراز احمد نے بابراعظم کے ہمراہ 196 رنز کی پارٹنر شپ قائم کی۔

پانچویں وکٹ پر شاندار شراکت داری کے باعث پاکستان نے 5 وکٹوں پر 317 رنز بنائے تھے۔ جن میں بابر اعظم کے 161 اور سرفراز کے 86 رنز شامل تھے۔

new zealand

kane williamson

KARACHI TEST

pakistan vs newzealand

تبولا

Tabool ads will show in this div

تبولا

Tabool ads will show in this div