پاکستانی سفارتخانے پر حملے میں مذموم بیرونی حلقے کار فرما ہیں، ذبیح اللہ مجاہد

حملے کا مقصد دو برادر اسلامی ملکوں کے درمیان بد اعتمادی پیدا کرنا تھا، ترجمان امارت اسلامیہ افغانستان

افغانستان میں پاکستانی سفارتخانے پر حملے میں ملوث ملزم کو گرفتار کرلیا گیا۔

مرکزی ترجمان امارت اسلامیہ افغانستان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ افغان سپیشل فورسز کی جانب کی جانب سے گزشتہ جمعہ کو پاکستانی سفارت خانے پر حملے میں ملوث دہشت گرد کو گرفتار کرلیا گیا ہے، حملے کے پیچھے کچھ مذموم بیرونی حلقے کار فرما ہیں۔

ذبیح اللہ مجاہد کے مطابق حملے میں ملوث غیرملکی دہشت گرد کا تعلق داعش سے ہے۔

ترجمان افغان حکومت کا کہنا ہے کہ تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اس حملے کا پلان داعش اور باغی تنظیم نے مل کر مرتب کیا تھا۔

ذبیح اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ اس حملے کا مقصد دو برادر اسلامی ملکوں کے درمیان بد اعتمادی کی فضا قائم کرنا تھا، واقعے کے حوالے سے مزید تحقیقات جاری ہیں۔

Pakistani Embassy Kabul

ZABIH ULLAH MUJAHID

SPOKESPERSON EMARAAT ISLAMI AFGHANISTAN

Tabool ads will show in this div