تحریک انصاف کی برطانیہ میں پبلک لسٹڈ کمپنی کے ذریعے فنڈنگ کا انکشاف

فنڈز یوکے میں موجود کمپنی کے ذریعے اکٹھےکیے گئے، دستاویزات

پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے برطانیہ میں پبلک لسٹڈ کمپنی کے ذریعے 10 لاکھ پاونڈ اکٹھے کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔

دستاویزات کے مطابق پی ٹی آئی نے فنڈز 2014 سے2022 تک اکٹھے کیے تاہم فنڈز ای سی پی میں ظاہر نہیں کیے گئے۔

فنڈز یو کے میں موجود کمپنی کے ذریعے اکٹھےکیے گئے، حکومت برطانیہ کو صرف5 لاکھ 64 ہزار پاونڈز کاریکارڈ جمع کرایا گیا۔

خیال رہے کہ تحریک انصاف کی جانب سے پبلک لسٹڈ کمپنی سے فنڈز اکٹھے کرنا غیرقانونی ہے۔ پبلک لسٹڈ کمپنی کے ذریعے اب تک مجموعی طور پر 18 لاکھ پاؤنڈز اکٹھے ہوچکے۔

پی ٹی آئی رہنما عمر ایوب کا کہنا ہے کہ برطانوی کمپنی سے ملنے والا پیسہ بینکنگ چینل سے آیا ، ای سی پی کے ساتھ تفصیلات شئیر کی جاچکی تھیں اور جو فنڈز اکٹھے ہورہے ہیں وہ آئندہ مالی سال میں ظاہر کیے جائیں گے۔

عمر ایوب نے کہا کہ یہ بات ٹھیک ہے کہ برطانوی کمپنی پبلک لسٹڈ ہے مگر وہاں بتادیا گیا تھا کہ یہ فنڈ سیاسی مقاصد کیلئے استعمال ہوںگے۔

سیاسی جماعت کا غیرملکی پبلک لسٹڈ کمپنی سے فنڈز لینا غیرقانونی ہے؟ سوال پر پی ٹی آئی رہنما عمر ایوب نے جواب دینے سے گریز کیا۔

PTI

Foreign Funding Case

Tabool ads will show in this div