کوئٹہ : پولیس ٹرک کے قریب خودکش دھماکا

خودکش بمبار رکشے میں تھا
<p>کوئٹہ : جائے وقوع کا منظر</p>

کوئٹہ : جائے وقوع کا منظر

Quetta Baleli Custom ke ilaqy mein police truck ke qareeb dhamaka | SAMAA TV | 30th November 2022

کوئٹہ ( Quetta ) کے علاقے بلیلی روڈ پر پولیس ٹرک کے قریب خودکش حملے میں اہلکار سمیت تین افراد شہید، جب کہ دیگر 23 افراد زخمی ہوگئے۔

پولیس کے مطابق خود کش دھماکا بلیلی کسٹم کے علاقے میں پولیس ٹرک کے قریب ہوا۔ حملے کی زد میں آکر پولیس اہلکار، خاتون کار سوار اور بچہ جاں بحق ہوئے، جب کہ 20 اہلکاروں سمیت 23 افراد زخمی ہوئے، جنہیں ابتدائی طبی امداد کیلئے سول اسپتال کوئٹہ منتقل کیا گیا۔ حادثے کے بعد اسپتال میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔

دھماکے کی اطلاع ملتے ہی سیکیورٹی فورسز اور ریسکیو ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں، جب کہ علاقے کی ناکہ بندی کردی گئی۔ بم ڈسپوزل اسکواڈ کی جانب سے دھماکے کے مقام سے اہم شواہد اکھٹے کرلیے گئے ہیں۔

قانون نافذ کرنے والے اداروں کے مطابق مذکورہ ٹرک میں سوار پولیس اہل کار پولیو مہم کی ڈیوٹی کیلئے جا رہے تھے کہ دھماکا ہوا۔

دھماکے میں پولیس کے ٹرک کو شدید نقصان پہنچا، جب کہ دھماکے کے مقام سے جسمانی اعضا بھی برآمد کیے گئے ہیں، جو ممکنہ طور پر خودکش حملہ آور کے ہیں۔ واقعے میں دیگر دو گاڑیاں بھی متاثر ہوئیں۔

خودکش دھماکے کی تفصیلات

میڈیا نمائندگان سے گفتگو میں ڈی آئی جی اظفر مہیسر کی جانب سے خودکش دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا گیا کہ خود کش حملے میں رکشا استعمال کیا گیا۔

ڈی آئی جی کے مطابق خودکش حملے میں 20 سے 25 کلو دھماکا خیز مواد استعمال ہوا۔ حملے میں 20 اہل کار زخمی ہوئے ہیں، جب کہ اہلکار سمیت تین افراد شہید ہوئے۔

انہوں نے یہ بھی بتایا کہ خود کش حملہ آور نے رکشا کو پولیس ٹرک سے ٹکرایا، جس سے پولیس کا ٹرک سڑک سے اتر کر کھائی میں گرا۔ ایک سوال کے جواب میں ڈی آئی جی کا کہنا تھا کہ تھریٹ الرٹ موجود تھا۔

صدر اور وزیراعظم کی مذمت

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے افسوسناک واقعہ میں جاں بحق ہونے والوں کیلئے مغفرت اور زخمیوں کیلئے جلد صحتیابی کی دعا کی۔

اپنے پیغام میں صدر پاکستان نے کہا کہ پاکستان کے بچوں کو پولیو جیسی بیماری سے محفوظ رکھنے کیلئے پرعزم ہیں، صدر نے ہیلتھ ورکرز اور پولیس کو ان کی خدمات پر خراج تحسین پیش کیا۔

وزیراعظم پاکستان نے کوئٹہ خود کش حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جان کی پرواہ کئے بغير پوليو مہم جاری رکھنے والے اہلکاروں کو خراج تحسين پيش کرتا ہوں۔ واقعے میں پولیس اہلکار اور ایک بچے کی شہادت پر دکھ اور رنج ہوا۔

اپنے بیان میں وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ مجھ سمیت پوری قوم کی ہمدردیاں شہداء کے اہل خانہ کے ساتھ ہیں۔ حکومت ملک سے پولیو کے خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھے گی۔ ملک سے پولیو کا مکمل خاتمہ حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ شرپسند عناصر ملک سے پولیو کے خاتمے کی مہم کو روکنے میں ہمیشہ ناکام رہیں گے۔ وزیراعظم نے واقعہ میں زخمی ہونے والوں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کا بھی حکم دیا۔

رانا ثنا اللہ

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے کوئٹہ خود کش حملے کی فوری رپورٹ طلب کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردوں کا ہدف بظاہر پولیس پارٹی تھی۔

quetta blast

Balochistan unrest

BLAST IN QUETTA

Tabool ads will show in this div