جرمنی میں ایک استاد پر 100 سے زائد بچوں سے جنسی زیادتی کی فرد جرم عائد

ملزم پر 14 سال سے کم عمر بچوں سے بدسلوکی کے 64 اور 17 سال تک کے نابالغوں سے زیادتی کے 35 الزامات ہیں

جرمنی میں ایک سابق استاد پر سو سے زائد بچوں اور نوجوانوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے الزام میں فرد جرم عائد کردی گئی۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق جرمنی کے شہر فرینکفرٹ میں ایک شخص پر 23 برسوں (1998 سے 2021) کے دوران ایک سو سے زائد بچوں اور نوجوانوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کا الزام ہے۔

47 سالہ ملزم پیسے کے اعتبار سے سابق استاد رہ چکا ہے اور اسی دوران اس نے یہ گھناؤنا کام کیا۔

جرمنی حکام کو اس کے جرائم کا پتہ اس وقت چلا جب امریکا کی جانب سے اسے انٹر نیٹ پر قابل اعتراض مواد پھیلانے والا قرار دیا گیا۔

امریکی حکام کی اطلاعات ہی کی روشنی میں جرمنی کی پولیس نے ملزم کے گھر پر چھاپہ مارا جہاں سے انہیں مختلف اقسام کا مواد ملا۔

ملزم کے گھر سے ملنے والی یوایس بی ڈیوائسز سے ملزم کے خلاف شواہد ملے تھے۔

ملزم کے خلاف فرد جرم میں 14 سال سے کم عمر بچوں کے ساتھ بدسلوکی کے 64 الزامات اور 14 سے 17 سال کی عمر کے نابالغ افراد کے ساتھ زیادتی کے 35 الزامات شامل ہیں۔

germany

sexually abusing

Tabool ads will show in this div