جنرل باجوہ نے پاک فوج کی کمان جنرل سید عاصم منیرکو سونپ دی

جنرل باجوہ کا نئے آرمی چیف جنرل سید عاصم کیلئے نیک خواہشات کا اظہار

پاک فوج میں کمان کی تبدیلی کی تقریب آج بروز منگل 29 نومبر کو جنرل ہیڈکوارٹرز ( جی ایچ کیو) ( GHQ ) میں ہوئی، جہاں سبکدوش ہونے والے آرمی چیف جنرل باجوہ نے پاک فوج کی کمان جنرل سید عاصم منیر کے سپرد کی۔

جی ایچ کیو سے ملحقہ ہاکی اسٹیڈیم میں کمان کی تبدیلی کی تقریب سے قبل جنرل قمر جاوید باجوہ نے یادگار شہدا پر حاضری دی اور پھول چڑھائے۔ اس موقع پر انہوں نے شہدا کیلئے فاتحہ خوانی بھی کی۔

تبدیلی کمان کی تقریب کا آغاز ملٹری بینڈ کی جانب سے پیش کی گئی خوبصورت دھنوں سے ہوا۔

پنڈال آمد پر اعزازی گارڈز کی جانب سے شاندار گارڈ آف آنر اور الوداعی سلامی پیش کی گئی۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے اعزازی گارڈ کا معائنہ کیا۔ جنرل سید عاصم منیر فور اسٹار جنرل کے شولڈر رینکس اور کالر میڈل لگا کر تقریب میں شریک ہوئے۔

تقریب میں سابق آرمی چیف جنرل ریٹائرڈ راحیل شریف شرکاء کی توجہ کا مرکز بنے رہے، حاضر سروس، ریٹائرڈ افسران اور خواتین نے راحیل شریف کے ساتھ تصاویر بنوائیں، جب کہ سابق آرمی چیف اشفاق پرویز کیانی بھی اچکن اور جناح کیپ میں ملبوس، تقریب میں شريک ہوئے۔

تقریب میں سبکدوش ہونے والے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ نے چھ برس بعد پاک فوج کی کمان نئے آرمی چیف جنرل سید عاصم منیر کے حوالے کی۔

کمان کی تبدیلی کی تقریب میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل ساحر شمشاد، ایئرفورس چیف ایئرمارشل ظہیر احمد بابر سندھو، لیفٹننٹ جنرل نگار جوہر، سابق فوجی سربراہان، غیر ملکی مندوبین، ملٹی اتاشی، وفاقی وزرا اور وزرائے اعلیٰ بھی موجود تھے۔

جنرل باجوہ کا خطاب

تقریب سے اپنے الوادعی خطاب میں جنرل باجوہ نے کہا کہ میں اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرتا ہوں کہ اس نے مجھے عظیم فوج میں خدمت کا موقع دیا اور مجھے یہ اعزاز دیا، امید ہے کہ نئے آرمی چیف جنرل عاصم منیر کی پروموشن ملک اور قوم کی ترقی کا باعث بنے گی۔ مجھے پورا یقین ہے کہ ان کی تعیناتی ملک اور قوم کیلئے بہترین فیصلہ ثابت ہوگی۔

سبکدوش ہونے والے آرمی چیف جنرل باجوہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ ”ریٹائر ہونے کے بعد بھی میری روح کا رشتہ فوج سے قائم رہے گا، ان کی کسی بھی کامیابی کو میں اپنی کامیابی سمجھ کر فخر محسوس کروں گا“۔

اپنے مختصر خطاب میں جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ پاک فوج نے ہمیشہ میری آواز پر لبیک کہا، خوشی ہے کہ اتنے قابل افسر کے ہاتھ میں فوج کی کمان دے کر ریٹائر ہو رہا ہوں، فوج کی کامیابی کا اندازہ اس بات سے لگائیں کہ ان کی کامیابیوں کا اعتراف صرف دوستوں ہی نے نہیں بلکہ دشمنوں نے بھی کیا۔ میں پاک فوج کی کامیابیوں کیلئے دعا گو ہوں۔

واضح رہے کہ جنرل عاصم منیر کو پاکستان کے سترہویں چیف آف آرمی اسٹاف ہونے کا اعزاز حاصل ہوا ہے۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے پاک فوج کے سولہویں سربراہ کے طور پر 6 سال تک خدمات انجام دیں۔

بطور سربراہ پاک فوج جنرل قمر جاوید باجوہ نے ضرب عضب کی کامیابیوں کو تقویت دینے کیلئے آپریشن ردالفساد شروع کیا جس سے دہشتگرد گروپوں کے سلیپر سیلز اور سہولت کاروں کا خاتمہ ممکن ہوا۔

نئے آرمی چیف کے لئے نامزد سید عاصم منیر کا عسکری سفر

حافظ سید عاصم منیر نئے آرمی چیف تعینات کئے گئے ہیں، انہوں نے فرنٹیئر فورس رجمنٹ کی 23ویں بٹالین میں کمیشن حاصل کیا اور اپنے سفر کا آغاز کیا۔

لیفٹیننٹ جنرل سید عاصم منیر احمد شاہ ہلال امتیاز ملٹری ایک تھری اسٹار رینک کے جنرل ہیں، جو پاکستان آرمی میں کوارٹر ماسٹر جنرل کے طور پر خدمات انجام دے رہے ہیں۔ سید عاصم منیر اس وقت پاکستان کے اگلے آرمی چیف بننے والے جرنیلوں کی فہرست میں سب سے سینئر افسر ہیں۔ وہ اعزازی تلوار بھی حاصل کر چکے ہیں۔

سید عاصم منیر منگلا میں آفیسرز ٹریننگ سکول کے 17ویں کورس سے ہیں۔ انہوں نے فرنٹیئر فورس رجمنٹ کی 23ویں بٹالین میں کمیشن حاصل کیا۔ انہیں ستمبر 2018 میں لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر ترقی دی گئی اور بعد ازاں ڈی جی آئی ایس آئی کے عہدے پر تعینات کیا گیا۔ اس سے قبل ملٹری انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر جنرل کے طور پر کام کر چکے ہیں۔

سید عاصم نصیر کو مارچ 2018 میں ہلال امتیاز سے نوازا گیا تھا۔ وہ اس سے قبل پاکستان کے شمالی علاقہ جات میں تعینات فوجی دستوں کے کمانڈر کے طور پر خدمات انجام دے چکے ہیں۔

انہوں نے 16 جون 2019 کو لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کے ساتھ تبدیل ہونے تک آئی ایس آئی کے 23 ویں ڈائریکٹر جنرل کے طور پر خدمات انجام دیں۔

ARMY CHIEF

pak army

general qamar javed bajwa

COAS ASIM MUNIR

رضوان علی سومرو Nov 29, 2022 09:31am
کاش جنرل عاصم منیر فوج کا وہ امیج بناسکے جو اس کا تھا فوج جو نقصان گزشتہ دور میں ہیوا وہ اب نہ ہو
Tabool ads will show in this div