عمران خان اس پوزیشن میں نہیں کہ دھرنے کی کال دے سکیں، رانا ثنا اللہ

لوگوں کو سمجھ آگئی ہے کہ قوم کو خواہ مخواہ کس ہیجانی کیفیت میں مبتلا کیا گیا ہے، وفاقی وزیر

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ کا کہنا ہے کہ عمران خان اس پوزیشن میں نہیں کہ کوئی بڑا اجتماع یا دھرنے کی کال دے سکیں۔

اسلام آباد میں قائم کنٹرول روم میں سرکاری ٹی وی (پی ٹی وی) سے گفتگو کے دوران رانا ثنا للہ نے کہا کہ عمران خان کو راولپنڈی میں انسانوں کا جو سمندر اکٹھا کرنا تھا ، اس میں 12 سے 15 ہزار لوگ ہی ہوں گے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ 12 سے 15 ہزار لوگوں کی حفاظت کے لئے پولیس نے 8 سے 10 ہزار اہلکار جلسہ گاہ کے اطراف ذمہ داریاں نبھارہے ہیں۔ اس کے علاوہ اسلام آباد پولیس، رینجرز اور ایف سی کے 16 ہزار اہلکار 2 شفٹوں میں ڈیوٹی دے رہے ہیں، 15 سے 16 ہزار انسانوں کے سمندر کے لئے 26 ہزار سیکیورٹی اہلکار تعینات ہیں۔

رانا ثناءاللہ نے کہا کہ لوگوں کو سمجھ آگئی ہے کہ قوم کو خواہ مخواہ کس ہیجانی کیفیت میں مبتلا کیا گیا ہے اور اسے سے کیا حاصل ہوگا، قاسی لئے لوگوں نے ان کے لانگ مارچ کا بھی بائیکاٹ کردیا ہے۔ جو لوگ آج جلسے میں شامل ہیں ، اللہ کرے کہ ان کی سمجھ میں یہ بات آجائے۔

اگر عمران خان نے دھرنے کا اعلان کیا تو ان کے جلسے میں 500 سے 700 لوگ رہ جائیں گے، اگر وہ سردی میں لوگوں کا خیال نہیں رکھنا چاہتے تو ان کی مرضی ہے۔ عمران خان اس پوزیشن میں نہیں کہ کوئی بڑا اجتماع یا دھرنے کی کال دے سکیں۔

PTI

RANA SANAULLAH

PTI long march

Tabool ads will show in this div