آرمی چیف کے اہلخانہ کے ٹیکس گوشوارے کیسے لیک ہوئے؟ تفصیلات سامنے آگئیں

ایف بی آر کے تمام 11 گرفتار افسران اور اہلکار مزید تفتیش کےلیے اسلام آباد منتقل

آرمی چیف کے اہلخانہ کے ٹیکس گوشوارے لیک ہونے کی مزید تفصیلات سامنے آگئیں۔

ذرائع کے مطابق گوشوارے کارپوریٹ ٹیکس آفس لاہور کے ڈپٹی کمشنر کے لاگ ان سے ڈاؤن لوڈ ہوئے۔ گوشواروں کی تصویر بھی ڈپٹی کمشنر عاطف نوازوڑائچ کے کمپیوٹر سے بنائی گئیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ گرفتارافراد کے موبائل فون اور لیپ ٹاپ کی فرانزک سے پلان پکڑا گیا۔

حکام کے مطابق 2 ڈپٹی ڈپٹی کمشنر لینڈ ریونیو سمیت11ایف بی آرافسر و اہلکار گرفتار ہوئے ہیں، تمام گرفتار افسران اور اہلکاروں کو مزید تفتیش کےلیے اسلام آباد منتقل کردیا گیا۔

خیال رہے کہ آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ کے اہل خانہ کی ٹیکس معلومات لیک ہونے کے معاملے پر ابتدائی انکوائری رپورٹ مرتب کرلی گئی ہے۔

ابتدائی رپورٹ کے مطابق معلومات لیک ہونے پر ان لینڈ ریونیو کے 2 افسران کو برطرف کر دیا گیا ہے، جب کہ ڈپٹی کمشنرز ان لینڈ ریونیو عاطف نواز وڑائچ اور ظہور احمد کو عہدے سے ہٹا دیا گیا ہے۔

قبل ازیں وفاقی وزیرخزانہ سینیٹر محمد اسحاق ڈار نے آرمی چیف جنر ل قمر جاوید باجوہ کے اہل خانہ کی ٹیکس معلومات کے غیرقانونی اورغیرضروری لیک ہونے کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے معاون خصوصی طارق محمود پاشا کو ایف بی آر کے ڈیٹا کی خلاف ورزی کی فوری تحقیقات کرنے کی ہدایت کی اور 24گھنٹوں میں رپورٹ پیش کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ یہ واضح طور پر ٹیکس کی معلومات کی مکمل راز داری کی خلاف ورزی ہے جو قانون فراہم کرتا ہے۔

ARMY CHIEF

TAX INFORMATION LEAKED

Tabool ads will show in this div