فیض آباد پر پی ٹی آئی کا جلسہ، اسلام آباد پولیس کی ضروری ہدایات جاری

فیض آباد سے اسلام آباد آنے اور جانے والا راستہ بند ہوگا

فیض آباد پر پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی ) کے جلسے کے تناظر میں اسلام آباد پولیس کی جانب سے ضروری ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

ترجمان اسلام آباد پولیس کے مطابق اسلام آباد میں آمد و رفت کے تمام راستے کھلے ہیں۔ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی حدود میں کہیں بھی راستے کنٹینرز لگا کر بند نہیں کیے گئے۔

پولیس کے مطابق تمام تقریبات اور سرگرمیاں معمول کے مطابق جاری ہیں، تاہم فیض آباد پر راولپنڈی کی حدود میں پی ٹی آئی کی سرگرمیوں کے باعث فیض آباد سے اسلام آباد آنے اور جانے والا راستہ بند ہوگا۔

ترجمان نے یہ بھی بتایا کہ شہری متبادل راستہ اختیار کریں اور کسی بھی ہنگامی صورت حال میں پکار 15 پر کال کریں۔

واضح رہے کہ فیض آباد کے قریب جلسے کی اجازت ملنے پر پی ٹی آئی کے کارکنان کی جانب سے جلسے کی تیاری کیلئے کنٹینر لگا کر روڈ بند کردی گئی ہے۔ براستہ فیض آباد اسلام آباد کے داخلی اور خارجی راستے محدود ہیں۔ شہریوں سے اپیل کی گئی ہے کہ متبادل راستے اختیار کریں۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ لانگ مارچ 26 نومبر کو راولپنڈی پہنچے گا جہاں پر اگلے لائحہ عمل کا اعلان کیا جائے گا۔

دوسری طرف وزارت داخلہ کی جانب سے پاکستان تحریک انصاف کے لانگ مارچ کے حوالے سے چاروں صوبوں پنجاب، خیبرپختونخوا، بلوچستان، سندھ سمیت گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کی حکومت کو خط ارسال کر دیئے ہیں۔

خط میں تمام صوبائی حکومتوں، جی بی اور آزاد کشمیر کی حکومتوں کو بتایا گیا ہے کہ لانگ مارچ کے دوران فول پروف سیکیورٹی یقینی بنائی جائے۔

خط میں مزید کہا گیا کہ حقیقی آزادی مارچ کی جڑواں شہروں میں آمد کی رسک اسسمنٹ کی گئی، مختلف گروپوں نے لانگ مارچ سے متعلق تھریٹ جاری کررکھے ہیں۔

IMRAN KHAN

LONG MARCH PTI

ISLAMABAD POLICE CASE

Tabool ads will show in this div