نئے آرمی چیف کے لئے نامزد سید عاصم منیر کا عسکری سفر

سید عاصم منیر نے فرنٹیئر فورس رجمنٹ کی 23ویں بٹالین میں کمیشن حاصل کیا

حافظ سید عاصم منیر نئے آرمی چیف تعینات کئے گئے ہیں، انہوں نے فرنٹیئر فورس رجمنٹ کی 23ویں بٹالین میں کمیشن حاصل کیا اور اپنے سفر کا آغاز کیا۔

لیفٹیننٹ جنرل سید عاصم منیر احمد شاہ ہلال امتیاز ملٹری ایک تھری اسٹار رینک کے جنرل ہیں، جو پاکستان آرمی میں کوارٹر ماسٹر جنرل کے طور پر خدمات انجام دے رہے ہیں۔

سید عاصم منیر اس وقت پاکستان کے اگلے آرمی چیف بننے والے جرنیلوں کی فہرست میں سب سے سینئر افسر ہیں۔

وہ اعزازی تلوار بھی حاصل کر چکے ہیں۔

سید عاصم منیر منگلا میں آفیسرز ٹریننگ سکول کے 17ویں کورس سے ہیں۔ انہوں نے فرنٹیئر فورس رجمنٹ کی 23ویں بٹالین میں کمیشن حاصل کیا۔ انہیں ستمبر 2018 میں لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر ترقی دی گئی اور بعد ازاں ڈی جی آئی ایس آئی کے عہدے پر تعینات کیا گیا۔ اس سے قبل ملٹری انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر جنرل کے طور پر کام کر چکے ہیں۔

سید عاصم نصیر کو مارچ 2018 میں ہلال امتیاز سے نوازا گیا تھا۔ وہ اس سے قبل پاکستان کے شمالی علاقہ جات میں تعینات فوجی دستوں کے کمانڈر کے طور پر خدمات انجام دے چکے ہیں۔

سید عاصم منیر نے 17 جون 2019 سے 6 اکتوبر 2021 تک گوجرانوالہ میں XXX کور (پاکستان) کی کمانڈ کی۔

انہوں نے 16 جون 2019 کو لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کے ساتھ تبدیل ہونے تک آئی ایس آئی کے 23 ویں ڈائریکٹر جنرل کے طور پر خدمات انجام دیں۔

جون 2019 میں، عاصم منیر کی جگہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کو نیا ڈی جی آئی ایس آئی بنایا گیا، اور عاصم منیر کا تبادلہ کر کے انہیں گوجرانوالہ میں XXX کور کا کور کمانڈر مقرر کیا گیا۔

ARMY CHIEF ISSUE

ARMY CHIEF SELECTION

Tabool ads will show in this div