آرمی چیف کی تعیناتی،وفاقی کابینہ کا خصوصی اجلاس

آرمی ایکٹ میں مجوزہ ترمیم پر غور

وزیراعظم میاں محمد شہباز شریف کی زیر صدارت وفاقی کابینہ ( Federal Cabinet) کا خصوصی اجلاس اسلام آباد میں ہوا۔

وزیراعظم شہبازشریف کی زیر صدارت آج بروز جمعرات 24 نومبر کو ہونے والے خصوصی کابینہ اجلاس میں وزیر دفاع خواجہ آصف، وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ، مشیر قانون ملک شہادت اور وزیر صحت عبدالقادر پٹیل بھی شریک ہوئے۔

وفاقی وزرا شیری رحمان، عون چوہدری، چوہدری سالک حسین، امین الحق، شاہ زین بگٹی، مولانا اسعد محمود اور ریاض پیر زادہ بھی اجلاس میں موجود تھے۔ سینیٹر طلحہ محمود ، اسرار ترین کے علاوہ دیگر وفاقی وزراء بھی آج ہونے والے وفاقی کابینہ کے خصوصی اجلاس میں شریک ہوئے۔

ذرائع کے مطابق اجلاس سے قبل وزیراعظم شہبازشریف نے وفاقی وزرا سے بھی خصوصی مشاورت کی اوراعتماد میں لیا۔

اجلاس میں اہم تقرریوں سے متعلق آرمی ایکٹ میں مجوزہ ترمیم پر غورکیا گیا، جب کہ کابینہ 27 اکتوبر اور 15 نومبر کے ای سی سی اجلاسوں کے فیصلوں کی منظوری دے گئی۔

وفاقی کابینہ میں قومی ادارہ انٹیلیجنس اینڈ سیکیورٹی اسٹڈیز کے قیام کی منظوری بھی دی گئی۔ بین المذاہب ہم آہنگی پالیسی کی منظوری بھی آج کے ایجنڈے میں شامل تھی۔ اجلاس میں ملکی سیاسی و معاشی صورت حال کا بھی جائزہ لیا گیا۔

واضح رہے کہ آرمی چیف کی تعیناتی سے متعلق وزارت دفاع سے آنے والی سمری بھی وزیراعظم آفس تک پہنچی، جس پر آج کے ہونے والے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا۔

وزیراعظم آفس نے چھ سینیر ترین فوجی افسروں کی سمری ملنے کی تصدیق کی۔ آرمی چیف اور چئیرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی کی تعیناتی کیلئے ناموں کا پینل موصول ہوا۔

FEDERAL CABINET

pm shehbaz sharif

ARMY CHIEF SELECTION

Tabool ads will show in this div