حاجی غلام علی نے خیبرپختونخوا کے 33ویں گورنر کی حیثیت سے حلف اُٹھالیا

چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ قیصر رشید خان نے حاجی غلام علی سے حلف لیا

نامزد گورنر خیبرپختونخوا حاجی غلام علی نے صوبے کے 33 ویں گورنر کی حیثیت سے حلف اُٹھالیا۔

چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ قیصررشیدخان نے حاجی غلام علی سے حلف لیا۔ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمودخان تقریب حلف برداری سے غیرحاضر رہے۔

صدر مملکت عارف علوی نے حاجی غلام علی کی بطور گورنرخیبر پختونخوا تعیناتی کی منظوری دے تھی۔

جمعیت علمائے اسلام کے حاجی غلام علی کی بطور گورنر خیبرپختونخوا تعیناتی کی وزیراعظم شہبازشریف کی ایڈوائس صدر مملکت عارف علوی کو بھجوائی گئی تھی۔

مزید پڑھیں؛ گورنر بلوچستان کا عہدہ پیپلزپارٹی کو دیئے جانے کا امکان

خیبر پختونخواہ کے گورنر کا عہدہ گزشتہ کئی ماہ سے خالی تھا جس پر تقرری کے سلسلہ میں وزیر اعظم شہباز شریف کی جانب سے اتحادیوں جماعتوں سے مشاورت بھی ہو رہی تھی۔

وزیر اعظم نے مشاورت کے بعد گورنر خیبر پختونخوا کیلئے جمعیت علمائے اسلام کے رہنما حاجی غلام علی کا نام صدر مملکت کو ارسال کیا تھا۔

دو جون کو اتحادی جماعتوں کے درمیان عمران خان حکومت کے خاتمے کے بعد گورنر خیبرپختونخوا کا عہدہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے حصے میں آیا تھا تاہم اکرم خان درانی اور حاجی غلام علی نے یہ عہدہ لینے سے معذرت کرلی تھی۔

مزید پڑھیں: سابق گورنر کے پی مستعفی ہونے کے بعد بھی مزے

اتحادی جماعتوں کے درمیان اس پر ایک بار پھر مشاورت کی گئی اور گورنر خیبرپختونخوا کا عہدہ عوامی نیشنل پارٹی کو دینے کا فیصلہ کیا گیا، جس کیلئے آصف زرداری نے اہم کردار ادا کیا۔

تاہم اب ایک بار پھر اتحادی جماعتوں کی مشاورت کے بعد مولانا فضل الرحمان کے نامزد کردہ حاجی غلام علی کو گورنر خیبرپختون خوا تعینات کرنے پر اتفاق ہوچکا ہے۔

governor kp

Tabool ads will show in this div