جوائے لینڈ پر پابندی کی درخواست مسترد

آپ نے فلم دیکھی نہیں اور پابندی کیلئے آگئے ہیں ، چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ

سندھ ہائیکورٹ نے فلم ”جواۓ لینڈ“ کی ریلیز کے خلاف درخواست مسترد کر دی۔

سندھ ہائیکورٹ میں پاکستانی فلم جوائے لینڈ پر پابندی عائد کیے جانے کی درخواست کے حوالے سے سماعت ہوئی ۔

درخواست گزار مولوی اقبال حیدر نے موقف اختیار کیا کہ جوائے لینڈ فلم آئین کے آرٹیکل 227 کی خلاف ورزی ہے، فلم کا مواد اس قابل نہیں کہ اس پر کھلی عدالت میں تبصرہ کیا جائے۔

مولوی اقبال حیدر کا مزید کہنا تھا کہ کسی ٹرانسجینڈر کو مرد سے محبت اور شادی کی اجازت اسلام نہیں دیتا، پاکستان میں اسلام کی روح اور تعلیمات کے خلاف کوئی کام نہیں کیا جاسکتا، اس لئے فلم پر پابندی لگائی جائے۔

سندھ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس احمد علی شیخ نے درخواست گزار سے استفسار کیا کہ آپ نے فلم دیکھی ہے ؟

درخواست گزار کے انکارپرچیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ آپ نے فلم دیکھی نہیں اور پابندی کے لئے آگئے ہیں۔

عدالت نے درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوۓ مسترد کردی۔

SINDH HIGH COURT

Joyland

Pakistani film Joyland

Tabool ads will show in this div